وزیراعظم نے آئی جی جیل خانہ جات کو بلا کر کیا دھمکی دی؟ تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آگیا

وزیراعظم نے آئی جی جیل خانہ جات کو بلا کر کیا دھمکی دی؟ تہلکہ خیز دعویٰ سامنے ...
وزیراعظم نے آئی جی جیل خانہ جات کو بلا کر کیا دھمکی دی؟ تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آگیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کی پاکستان میں موجود مرکزی قیادت  جیل میں ہے اور اب دعویٰ کیا گیا ہے کہ آئی جی جیل خانہ جات پنجاب کو دھمکی دی ہے کہ آپ کو مانیٹر کیا جارہا ہے ، اگر شہبازشریف یا حمزہ شہبا ز کوئی سہولت دی تو آپ کو نہیں چھوڑا جائے گا۔ یہ دعویٰ رانا ثناء اللہ نے کیا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنا ء اللہ کا کہناتھاکہ "دو دن قبل اس ملک کے وزیراعظم نے آئی جی جیل خانہ جات پنجاب کو بلایا اور اسے کہا کہ میں تمہیں مانیٹر کررہا ہوں، جیل کے اندر اور باہر IB کو بٹھا رکھا ہے، اگر شہبازشریف اور حمزہ شہباز کو آپ نے کوئی سہولت دی تو تمہیں چھوڑوں گا نہیں، یعنی اس قسم کی حکومت اور ٹولہ اس ملک پر مسلط ہے جسے انتقام کے علاوہ کسی چیز سے کوئی سروکار نہیں"۔

رانا ثناء اللہ کا مزید کہنا تھاکہ " افسران اور کابینہ کے اراکین بتا رہے ہیں کہ پانچ پانچ گھںٹوں کی میٹنگز ہوتی ہیں، ایجنڈا کچھ لیکن وہاں شروع ہوجاتاہے کہ چھوڑوں گا نہیں، کوئی جیل میں سہولت نہیں دوں گا، بات نوازشریف پر تنقید سے شروع ہوتی ہے اور اسی پر ختم ہوجاتی ہے،  ایجنڈا یہ ہو کہ جناب گندم کی قلت ہے اوربروقت درآمد نہ ہوئی تو لوگوں کو آٹا نہیں ملے گا لیکن وہ کہتے ہیں کہ کسی کو نہیں چھوڑوں گا، سب کو جیل بھیج دوں گا"۔

ان کا مزید کہناتھا کہ انتقام کی مہم ابھی تک  نااہل ٹولا چلا رہا ہے ، یہ انتقام کی آگ ابھی صرف ایوانوں یا عدالتوں میں ہے، اگر انتقام کی آگ گلی محلوں میں پھیل گئی تو حالات کسی کے بس میں نہیں رہیں گے، میری سب سے اپیل ہے کہ وہ اس صورتحال کو دیکھیں،  انتقام اور نفرت میں غرق  ایک ٹولہ پاکستان پر مسلط ہے،مخالفین اور اپوزیشن کے خلاف انتقام لینے اور ترجمانوں کی فوج کو اس کام پر لگایاگیا ہے کہ اپوزیشن کو گالیاں دینی ہیں اور وہ شروع ہوجاتے ہیں، صبح سے شام تک یہی کام ہے ، کوئی عوامی فلاح کا کام نہیں ہورہا، بروقت نہ روکا گیا تو حالات انتہائی گھمبیر ہوسکتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -سیاست -