کس حکومتی عہدے دار نے آئی جی جیل خانہ جات کو بلا کر حمزہ شہباز کے بارے ہدایات دیں؟رانا ثنا اللہ کے دعوی پر راجہ بشارت بھی میدان میں آگئے

کس حکومتی عہدے دار نے آئی جی جیل خانہ جات کو بلا کر حمزہ شہباز کے بارے ہدایات ...
کس حکومتی عہدے دار نے آئی جی جیل خانہ جات کو بلا کر حمزہ شہباز کے بارے ہدایات دیں؟رانا ثنا اللہ کے دعوی پر راجہ بشارت بھی میدان میں آگئے

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت نے کہا ہے کہ آئی جی جیل خانہ جات کے حوالے سے رانا ثنا اللہ کا دعوی بالکل بے بنیاد ہے،آئی جی جیل خانہ جات کو کسی حکومتی عہدیدار نے کہیں نہیں بلایا اور نہ ہی انہیں حمزہ شہباز کے حوالے سے کوئی ہدایات دی گئی ہیں۔

ا پنے بیان میں راجہ بشارت نے کہا کہ حمزہ شہباز ہو یا کوئی اور قانون کے سامنے سب برابر ہیں اور انکے ساتھ بھی قانون کے مطابق ہی سلوک کیا جا رہا ہے۔موجودہ حکومت قومی اداروں کی آزادی پر یقین رکھتی ہے اوراس وقت تمام قومی ادارے آزاد اور خودمختار ہیں۔انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن نے قومی اداروں کو بدنام کرنے کا وطیرہ بنا لیا ہے،وہ ایسے ہتھکنڈوں سے اپنے کرتوتوں پر پردہ ڈالنا چاہتے ہیں۔راجہ بشارت نے مزید کہا کہ یہ ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت تمام قومی اداروں کو دبا میں لانا چاہتے ہیں جس کا مقصد اپنی کرپٹ قیادت کو بچانا ہے لیکن ان کی کوئی سازش، کوئی کوشش کامیاب نہیں ہو گی۔انہوں نے رانا ثنااللہ کو مشورہ دیا کہ وہ اداروں کو بلا جواز متنازعہ بنانے کی بجائے اپنے لیڈروں کے ساتھ قانون کا سامنا کریں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثنا ء اللہ کا دعویٰ کرتے ہوئے کہناتھاکہ دو دن قبل وزیراعظم نے آئی جی جیل خانہ جات پنجاب کو بلایا اور اسے کہا کہ میں تمہیں مانیٹر کررہا ہوں، جیل کے اندر اور باہر آئی بی کو بٹھا رکھا ہے، اگر شہبازشریف اور حمزہ شہباز کو آپ نے کوئی سہولت دی تو تمہیں چھوڑوں گا نہیں۔رانا ثنا ء اللہ نے کہا کہ اس قسم کی حکومت اور ٹولہ اس ملک پر مسلط ہے جسے انتقام کے علاوہ کسی چیز سے کوئی سروکار نہیں ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -