دوست مزاری کی گرفتاری‘ روجھان میں بازار بند‘ احتجاج 

دوست مزاری کی گرفتاری‘ روجھان میں بازار بند‘ احتجاج 

  

راجن پور‘ وہاڑی (ڈسٹرکٹ رپورٹر، بیورو رپورٹ، نامہ نگار)   سابق ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی میر دوست مزاری کے خلاف سرکاری آراضی پر غیر قانونی قبضہ کرانے کے الزام پر گذشتہ روز انٹی کرپشن پنجاب نے انہیں لاہور میں گرفتار کیا تھا جس پر روجہان میں ان کے سپورٹرز نے انڈس ہائی وے بلاک کرکے احتجاج کیا اور شہر میں شٹر ڈان ہڑتال کی انجمن تاجران کی جانب سے شٹرڈاون ہڑتال کی کال دی گئی تھی جس پر شہر کی تمام مام مارکیٹیں،بازار بند کر دیں گء مظاہرین نے (بقیہ نمبر22صفحہ6پر)

پلے کارڈ اٹھا کر احتجاج کیا اور پنجاب حکومت کی انتقامی کاروائی کے خلاف کی ہے مظاہرین کا کہنا تھا کہ دوست محمد مزاری کی گرفتاری وزیر اعلی کی ذاتی دشمنی اور گھٹیا حرکت ہے اور دوست محمد مزاری کی گرفتاری کی شدید مذمت کرتے ہیں مسلم لیگ ن کے ایم پی ایز میاں محمد ثاقب خورشید سردار خالد محمود ڈوگر یوسف کسیلیہ مسلم لیگ ن کے ضلعی سیکرٹری اطلاعات شیخ ظفر شہزاد پی پی 234 کے صدر محمد سعید اختر لائرز ونگ کے رہنما میاں ثاقب  خورشید سابق چیئرمین بلدیہ نادر علی بھٹی سابق کونسلرز بلدیہ شاہد نیاز چودھری بابا حنیف سندھی ندیم شیروانی محمد طارق گرامی نے   سردار دوست محمد خان مزاری کی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوے اسے بدترین انتقامی کاروائی اور لانگ مارچ میں ناکامی سے عوام کی توجہ ہٹانے کی کوشش قرار دیا ہے صحافیوں سے گفتگو کرے ہوے انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب حکومت اور پی ٹی آئی کی قیادت اپنی سیاسی مقبولیت کھو جانے کے خوف سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکے ہیں پنجاب حکومت کی جلد تبدیلی نوشتہ دیوار ہے گرفتاریوں سے اندرونی توڑ پھوڑ کو روکا نہیں جاسکتا چیف جسٹس آف پاکستان اور لاہور ہائی کورٹ سے مطالبہ نوٹس لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -