ایلون مسک کا ٹوئٹر کے 25 فیصد ملازمین فارغ کرنے کا فیصلہ، کتنی تعداد بنتی ہے؟

ایلون مسک کا ٹوئٹر کے 25 فیصد ملازمین فارغ کرنے کا فیصلہ، کتنی تعداد بنتی ہے؟
ایلون مسک کا ٹوئٹر کے 25 فیصد ملازمین فارغ کرنے کا فیصلہ، کتنی تعداد بنتی ہے؟

  

سان فرانسسکو (ڈیلی پاکستان آن لائن) دنیا کے امیر ترین شخص ایلون مسک کی جانب سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر کو خریدے جانے کے بعد امکان ہے کہ بڑے پیمانے پر ملازمین کو برطرف کیا جائے گا ۔ پہلے مرحلے میں ٹوئٹر کے 25 فیصد ملازمین کو گھر بھیجا جاسکتا ہے۔

این ڈی ٹی وی کے مطابق  واشنگٹن پوسٹ نے  اس معاملے سے واقف شخص کا حوالہ دیتے ہوئے رپورٹ کیاکہ ملازمین کی تعداد میں کمی کے حوالے سے ہونے والے مذاکرات کی قیادت ایلون مسک کے وکیل ایلکس سپیرو نے کی۔ ریگولیٹری فائلنگ کے مطابق ٹوئٹر کے 2021 کے آخر  تک سات ہزار سے زیادہ ملازمین تھے اور  اس کا ایک چوتھائی تقریباً دو ہزار بنتا ہے۔

خبر ایجنسی روئٹرز  کے مطابق ایلون  مسک نے ٹوئٹر کا کنٹرول سنبھالتے ہی  جمعرات کو ٹوئٹر کے چیف ایگزیکٹیو پراگ اگروال، فائنانس چیف نیڈ سیگل اور لیگل افیئرز اینڈ پالیسی چیف وجے گاڈے کوبرطرف کردیا تھا۔

مزید :

بزنس -سائنس اور ٹیکنالوجی -