نجی سکولز کا تین ماہ کی فیس ادا نہ کرنیوالے بچوں کو سلیبس دینے سے انکار

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)صوبائی دارلحکومت میں قائم نجی سکولز نے تین ماہ کی فیسیں ادا نہ کرنے والے بچوں کو گرمیوں کی چھٹیوں کا سلیبس دینے سے انکار کر دیا جبکہ بقایا واجبات کی ادائیگی کرنے والے بچوں کو چھٹیوں کا کام اور سلیبس دیا جانے لگا۔تفصیلات کے مطابق شہر لاہور میں درس و تدریس کے فرائض سر انجام دینے والے پرائیویٹ تعلیمی اداروں نے عدالت عالیہ کی طرف سے تین ماہ کی ایڈوانس فیسیں نہ لینے کے واضح احکامات کی نفی کرتے ہوئے طلباء سے موسم گرما کی چھٹیوں میں ہوم ورک اور سلیبس کی مد میں پیسے بٹورنا کر دیے جسکے باعث نجی تعلیمی اداروں میں پڑھنے والے طلباء کے والدین میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے ۔گرمیوں کی چھٹیوں کے اعلان کے باوجود پرائیویٹ سکولوں کی انتطامیہ نے گٹھ جوڑ کر کے بچوں سے ہوم ورک اور سلیبس کے نام پر لوٹنا شروع کر دیا ہے اور بیشتر بجی تعلیمی اداروں نے موسم گرما کی چھٹیوں کے سرکاری اعلان کے باوجود چھٹیاں نہیں دی ہیں جبکہ بچوں کے تین ماہ کے واجبات کی عدم ادائیگی کے باعث انہیں سلیبس دینے سے انکار کر دیا ہے جبکہ نجی سکولز انتظامیہ کا کہنا ہے کہ فیسیں ادا کرنے والے اور سلیبس کا معاوضہ ادا کرنے والے بچوں کو سلیبس دیا جائے گا ۔

اس حوالے سے آل پاکستان پرائیویٹ سکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن کے صدر ادیب جاودانی کا کہنا ہے کہ سمر ووکیشنز میں چھٹیوں کا کام دیا جاتا ہے تاکہ طلباء گھر بیٹھ کر تعطیلات کے بعد ہونے والے امتحانات کی تیاری کر سکیں۔انکا کہنا ہے کہ چھٹیوں سے قبل طلبا ء کو اپنے بقایاجات اور چھٹیوں کے کام کی مد میں فنڈ ادا کرنا لازمی ہوتا ہے مگر سلیبس کے نام پر تین ماہ کی فیسوں کا مطالبہ کرنے والے سکولوں کے ایجنڈے سے متفق نہیں ہیں۔اس حوالے سے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر (پرائیویٹ سکولز) حسنات احمد شیخ نے بتایا کہ چھٹیوں کے سلیبس کی آڑ میں تین ماہ کی فیسوں کا مطالبہ کرنے والے نجی تعلیمی اداروں کے خالف سخت کاروائی کی جائے گی اور عدالت عالیہ کے احکامات پر عمل کو یقینی بنایا جائے گا۔ ڈی او ایجوکیشن نے مزید بتایا کہ تین ماہ کی فیسوں کا مطالبہ کرنے ولاے نجی سکولوں کو شوکاز نوٹس جاری کر چکے ہیں جبکہ فیصلے پر عمل درآمد نہ کرنے والے تعلیمی اداروں کی رجسٹریشن منسوخ کرتے ہوئے سکول انتظامیہ کے خلاف مقدمہ بھی درج کیا جائے گا