پیسے جمع کرانے جاتا ہوں تو سرکاری افسر غائب ہو جاتے ہیں، پرویز رشید

لاہور(جنرل رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر پرویز رشید نے کہا ہے کہ عمران خان تنقید برداشت نہیں کر سکتے اور ایوان میں ان آوازوں  کو خاموش کرنا چاہتے ہیں جو ان کے کانوں میں کھٹکتی ہیں، عمران خان اب انجینئرڈ طریقے سے مسلم لیگ نون کے سینیٹ کے امیدواروں کو باہر رکھنے کیلئے سرکاری افسران کا استعمال کر رہے ہیں۔ جمعرات کوسینیٹر پرویز رشید نے لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ، میرے پر نام نہاد ڈیمانڈ بنائی گئی اور جس کے بارے میں مجھے کبھی کسی حوالے سے اطلاع نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ مجھ سے جس نام نہاد ڈیمانڈ کا مطالبہ کیا گیا، اس کو قانونی تقاضے پورے کرنے اور الیکشن میں حصے لینے کیلئے جب میں اس ڈیمانڈ کو جمع کرانے سرکاری دفاتر جاتا ہوں تو وہاں سے تمام آفیسرز غائب ہو جاتے ہیں اور کوئی میسر ہی نہیں ہوتا  میں اس پر ڈیمانڈ کے پیسے جمع کرا دوں اور میں پیسے لئے پھرتا ہوں کہ یہ جمع کرلیں مگر عمران خان کی جانب سے سرکاری افسران کو ہدایت ہے کہ ٹیکنیکل بنیادوں پر مجھے الیکشن کمیشن کے ذریعے سینیٹ انتخابات سے روکا جائے۔ سینیٹر پرویز رشید نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی جانب سے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جانے پر اپیل کروں گا اور اپنا قانونی حق استعمال کروں گا جبکہ حکومت دروازہ بند کر سکتی ہے لیکن آواز کو بند نہیں کر سکتی اور سوال پوچھتا رہوں گا کہ سرکاری اداروں کو عمران خان  اپنے حریفوں کیلئے استعمال کیوں کر رہے ہیں۔

پرویز رشید