بی زیڈ یو کے ہاسٹلوں کے مسائل

بہاؤ الدین زکریا یونیورسٹی(بی زیڈ یو) ملتان کے طلباء کے لیے مخصوص ہوسٹلوں میں کئی ایسے افراد غیر قانونی طور پر رہائش پذیر ہیں جو یونیورسٹی کے طالب علم نہیں اور اُن میں سے کئی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہیں جبکہ بعض ایسے بھی ہیں جو پولیس کو مطلوب ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اِن غیر طالب علم عناصر نے چند دن قبل مبینہ طور پر ریذیڈنٹ آفیسر کو تشدد کا نشانہ بنایا جبکہ یونیورسٹی حدود میں ا سلحے کی نمائش اور فائرنگ کے واقعات کی ویڈیوز بنا کر خود ہی سوشل میڈیا پر نشر کر دیں۔ یونیورسٹی طلباء کے مطابق جرائم پیشہ اور پولیس کو مطلوب غیرطالب علم عناصر کی وجہ سے ہاسٹل میں مقیم طلباء پریشانی اور خوف کا شکار ہیں۔ یونیورسٹی انتظامیہ بھی اِن کے سامنے بے بس نظر آتی ہے۔جنوبی پنجاب کی مختلف یونیورسٹیوں میں منشیات کی فروخت،تشدد اور لڑائی جھگڑوں کی خبریں گردش کرتی رہی ہیں جوایسے جرائم پیشہ عناصر کی وجہ ہی سے ممکن ہوتی ہیں لہٰذا گورنر پنجاب بطور چانسلر اور پنجاب حکومت اِس معاملے کا فوری نوٹس لیں اور اِن ہاسٹلوں میں رہائش پذیر  ایسے عناصرکے خلاف آپریشن ”کلین اپ“ کریں۔