بھارت بلوچستان کے راستے دہشتگردکارروائیاں کررہاہے,آئی جی ایف سی

31 جولائی 2015 (14:00)

نوشکی(مانیٹرنگ ڈیسک)انسپکٹر جنرل فرنٹیئر کور بلوچستان میجر جنرل شیر افگن نے کہا ہے کہ بھارت بلوچستان کے راستے پاکستان میں دہشت گرد کارروائیاں کررہاہے۔ یہ بات انہوں نے ضلع نوشکی میں دورے کے موقع پر قبائلی عمائدین سے گفتگو کے دوران کہی۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گرد تنظیموں کو اسلحہ، کمیونیکیشن اور پیسے دینے کےلئے انہی سرحدی علاقوں کو استعمال کیاجارہاہے انہوں نے کہاکہ دہشت گردوں کے پاس سرنڈر یامرنے کے سوا کوئی تیسرا آپشن نہیں۔ ریاست کےخلاف لڑنےوالے عبرتناک انجام کےلئے تیاررہیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کا مستقبل بلوچستان سے وابستہ ہے، اللہ نے اس خطہ کو مالامال کیاہے،مگر چند عناصر نہیں چاہتے کہ بلوچستان ترقی کرے۔انہوں نے کہاکہ پرامن بلوچستان کی پالیسی کے تحت ان لوگوں کو راستہ دینا ہے جو قومی دھارے میں شامل ہوناچاہتے ہیں اس پالیسی کے تحت ہتھیارڈالنے والوں کو قومی دھارے میں لایاجائےگااور ہتھیار ڈالنے والوں کی بھرپورمعاونت کی جائےگی۔ انہوں نے کہاکہ قوم ترقی چاہتی ہے، چند دہشت گرد پوری قوم کا مقابلہ نہیں کرسکتے۔اس سے قبل آئی جی ایف سی نے پاک ایران سرحدی شہر تفتان کا دورہ کیا۔ دورے کے دوران آئی جی ایف سی نے ایف سی جوانوں سے ملاقات کی انہوں نے قیام امن میں ان کی خدمات کو سراہتے ہوئے کہاکہ دہشت گردی کے خاتمے کےلئے ایف سی کے جوانوں نے بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔ اس موقع پر آئی جی ایف سی نے تفتان میں ایف سی کی کاوشوں سے ایک غیرآباد ہوٹل کا تزئین و آرائش کے بعد افتتاح کیا اور ہوٹل کو ایران جانے والے زائرین کے لئے کھول دیاگیا۔

مزیدخبریں