شوہر کو ڈرانے کی کوشش میں نوجوان لڑکی جان سے گئی

ڈیلی بائیٹس

لندن (نیوز ڈیسک) برطانیہ سے تعلق رکھنے والی ایک نوجوان لڑکی کی بدقسمتی دیکھئے کہ وہ اپنے شریک حیات کے ساتھ لڑائی کے بعد اسے جھوٹ موٹ کی خود کشی کا تاثر دینا چاہ رہی تھی مگر غلطی سے اصلی خود کشی کر کے جان سے ہاتھ دھو بیٹھی۔
دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق ابی گیل براﺅن اپنے شریک حیات جیمز برم کے ساتھ تھائی لینڈ کی سیر کو گئی تھی۔ ساحل پر چہل قدمی کے دوران ان کے درمیان کچھ بحث و تکرار ہوئی جس پر ناراض ہوکر وہ اپنے فلیٹ میں واپس چلی گئیں۔ جیمز برم کا کہنا ہے کہ ان کے درمیان کچھ خاص لڑائی نہیں ہوئی تھی البتہ وہ ناراض ہوکر واپس چلی گئی تھی۔ وہ سوچ رہے تھے کہ ذرا دیر سے واپس جائیں گے تاکہ اتنی دیر میں ابی گیل کا غصہ ٹھنڈا ہوجائے۔ تقریباً تین گھنٹے بعد وہ واپس فلیٹ پر پہنچے تو ابی گیل کو پھندے کے ساتھ لٹکا ہوا پایا۔

اس معروف خاتون نے نوجوان کی سب سے بڑی مشکل حل کردی، وہ کام کردیا کہ نوجوان ساری عمر یاد رکھے گا
بدقسمت لڑکی کی والدہ جین رونلڈ کا کہنا تھا کہ ان کی بیٹی جسمانی اور ذہنی طور پر صحت مند تھی اور اس نے اس سے پہلے کبھی خود کو نقصان پہنچانے کی کوشش نہیں کی تھی۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ انہیں پورا یقین ہے کہ ان کی بیٹی صرف اپنے شریک حیات کو ڈرانا چاہ رہی تھی تاکہ اسے احساس دلا سکے کہ وہ کتنی ناراض تھی، لیکن بدقسمتی سے وہ واقعی خود کشی کر بیٹھی۔


جین رونلڈ نے مزید بتایا ”جیمز نے مجھے کال کی۔ وہ کہہ رہا تھا کہ ابی گیل چلی گئی ہے۔ اس نے بتایا کہ ان کے درمیان لڑائی ہوئی تھی جس کے بعد ابی گیل نے خود کشی کرلی تھی۔ وہ آپس میں کم ہی لڑتے تھے۔ مجھے معلوم ہے انہوں نے مستقبل کے بارے میں بہت سے خواب دیکھے تھے۔ وہ عمر بھر اکٹھے رہنا چاہتے تھے اور اپنے بچوں کی خوشیاں دیکھنا چاہتے تھے۔ وہ صرف جیمز کو احساس دلانا چاہ رہی تھی کہ وہ اس سے ناراض ہے۔ اس کا خیال تھا کہ وہ اس کے پیچھے پیچھے آئے گا اور دیکھے گا کہ وہ کتنی ناراض ہے۔ وہ اپنی جان نہیں لینا چاہتی تھی۔ وہ تو صرف جیمز کو اپنی ناراضی کا احساس دلانا چاہتی تھی۔“