Daily Pakistan
x
ہمارا واٹس ایپ چینل جوائن کریں
واٹس ایپ چینل

ادب وثقافت


اپنے افراد خانہ کیساتھ روابط کے ضمن میں میری سوچ کا محور یہی ہوتا ہے کہ میں ان کیلیے کیا کر سکتا ہوں، یہ نہیں کہ وہ میرے لیے کیا کر سکتے ہیں 

بچے بہت الجھن اور پریشانی میں مبتلا تھے، وضاحت طلب نظروں سے دیکھ رہے تھے، میں نے اُنھیں کہا مشکل گھڑی کا ڈٹ کر مقابلہ کریں 

امریکی کھلے ڈُلے اور ہنسی مذاق کرنے والے تھے کوئی بات دل میں نہیں رکھتے تھے،جبکہ برطانوی تھوڑے سنجیدہ،کسی حد تک مغرور اور کینہ پرور تھے

 صدارت کا حلف اٹھانے پر کینیڈی نے کہا تھا ”یہ نہ دیکھیے کہ ملک آپ کیلئے کیا کرسکتا ہے، بلکہ یہ دیکھیے کہ آپ ملک کیلئے کیا کر سکتے ہیں“

یہ جگہ پہاڑوں کی بیچ بنی ہوئی تھی جس میں بڑی چٹان اور کنواں تھا،ہم کھنڈرات اور تباہ شدہ وادی کو دیکھ کر جلد مرکزی گیٹ سے باہر نکل آئے

 ہسپتال میں ملازمت کے دوران میں نے انسانیت کو انتہا کی بلندیوں پر دیکھا، کسی بھی انسان کو بچانے کے لیے ڈاکٹر کسی بھی حد تک جانے کو تیار رہتے تھے

دولت کمانے کے طریقے سیکھنے کیلئے کانفرنسوں اور سیمینارز میں عام طور پر وہی لوگ شرکت کر تے ہیں جو پہلے ہی کافی دولت مند ہوتے ہیں 

حج کے دوران دوست ملا، وہ جدہ میں ہی رہتا تھا، ایک دن منیٰ میں خوبصورت خیمے میں لے گیا جہاں پروقار شخص محفل کی جان بنا بیٹھا تھا

کچھ دنوں بعد سعودیوں کو احساس ہو گیا کہ سب اچھا نہیں چل رہا، ایک روز میں دفتر میں بیٹھا امریکہ سے آئے کلیم دیکھ رہاتھا تو ایک ایک دم چونکا

 کچھ حاصل کرنے کیلیے کچھ کھونا پڑتا ہے، یہ ایسا اصول ہے جسکی حقانیت مسلم اور مستند ہے، اس کا اطلاق ہر پیشے اور کاروبار پر ہوتا ہے

ہم استنبول کے مشہور کورڈ بازار گئے، بحری جہاز پر آس پاس کے جزیروں کی سیر کی، ریاض واپسی سے پہلے ایتھنز میں 2 راتیں گزارنا چاہتے تھے

ہسپتال کے   مریضوں اور ملازمین کیلیے پکا پکایا کھانا امریکہ سے آتا تھا، سعودی امریکی مشیروں کی باتوں میں آ کر اپنا قیمتی زر مبادلہ ضائع کرتے تھے

 اگر آپ کو اپنے بچوں سے پیار ہے تو انہیں اس دنیا میں ہر ممکن سہولت اور فائدہ پہنچانے کیلیے ہر قسم کی قربانی دینے کیلیے تیار رہیے

ترک باشندے پاکستانیوں سے بہت محبت کرتے ہیں، اندازہ رویوں سے ہو جاتا ہے، ترکی کے کھانے بہت اچھے ہیں، وہاں دیکھنے اور کرنے کو بڑا کچھ ہے

 وہ پیر پٹختے باہر آگئی فوراً استعفیٰ لکھ کر سیکرٹری کو بھیج دیا، کچھ دنوں بعد اپنی بے وقوفی کا احساس ہوگیا،اس واقعہ سے یہ ہوا کہ باقی گورے سیدھے ہو گئے 

 کسی صلے یا ستائش کی پرواہ کیے بغیر دوسروں کی مدد، کتنے ہی فوائد کی حامل ہے، اب مجھے کامل یقین ہو چکا ہے کہ ایک ان دیکھا ہاتھ میری رہنمائی پر مامور ہے

 میں نے ڈاکٹر تولان کو کہا کہ وہ مجھے ایک بہترین اربن ڈیزائنر لا کر دیں جو مسلمان بھی ہو کیونکہ کسی غیر مسلم کو مکہ میں داخلے کی اجازت نہیں ہے

 برطانوی خاتون فوراً کنٹرولر کے پاس چلی گئی اور کہا ایک پاکستانی کے ماتحت ملازمت کرنا اس کی توہین ہے لہٰذا وہ اب یہاں مزیدکام نہیں کرسکتی

کیا واقعی دینے کا عمل لینے سے زیادہ بہتر ہے؟ اگر آپ زیادہ سے زیادہ حاصل کرنا چاہتے ہیں تو دوسرے لوگوں کو بھی زیادہ سے زیادہ دیجئے

سعودی نوجوانوں کو پلانر کے طور پرمنصوبے میں شامل کیا، سب حوصلہ شکنی کر نے لگے کہ سعودیوں کو کام کرنے کی عادت نہیں، آپ وقت ضائع کر رہے ہیں 

 وہ انٹرویو کا خوف دور کرنے کی کوشش کر رہے تھے، ماحول ہلکا پھلکا رکھنے کیلئے لطیفے سنا ئے ایک قابل سماعت تھاقابل تحریر نہیں 

گاہکوں کو گھٹیا خدمات مہیا نہ کریں، میں بہت خوش ہوں پر لطف زندگی گزار رہا ہوں دوسروں کو زیادہ سے زیادہ دولت کمانے کا موقع فراہم کر رہا ہوں 

بلڈ پریشر کو ہر صورت قابو میں رہنا چاہئے، میں نے بالآخر ہتھیار ڈال دیئے حقیقت کو تسلیم کر لیا اور باقاعدگی سے دوا لینا شروع کر دی جو آج تک لے رہا ہوں 

 انھیں دیکھ کر میرے کان کھڑے ہوئے، یقین ہو گیا میرے ساتھ کچھ بہت ہی بُرا ہونے جا رہا ہے اور یہ کہ اس بار  غلط جگہ پر ہاتھ ڈال لیا ہے

 ہم نے اپنے سکول میں ان افراد کو ملازمت دی جن کی بطور استاد حیثیت معتبر تھی اور وہ تجربہ کار بھی تھے، ان کی ڈگریوں سے کوئی واسطہ نہ تھا

 2 بڑے منصوبوں مکہ اور الباحہ پروجیکٹ کا بوجھ آن پڑا، میں بری طرح تھک گیا تھا، خاندان کیساتھ برطانیہ اور امریکہ کے سیاحتی دورے پر نکل گیا

 75 سے زیادہ کتابوں کے خالق تھے، کبھی ایک لفظ شکوے کا نہیں نکلا،لوگوں نے شرافت کا بہت فائدہ اٹھایا، وضع دارانسان تھے، اندر ہی اندر گھلتے رہے

 روز مرہ زندگی کی سوچ اور افعال کی بنیاد صرف ایک ہی اصول ہے ”ہم کیسے دوسروں کی مدد کر سکتے ہیں اور کیسے انہیں طمانیت بخش سکتے ہیں؟“

 جلد پاکستان سے نکل جانا چاہتا تھا، مجھے حقیقتاً اس بات کا علم ہی نہیں تھا کہ اقوام متحدہ کی ملازمتوں میں بھی سودے بازی ہوتی ہے

جب تحقیقاتی گفتگو کی بلندیوں کو چھو رہے ہوتے تو میرے جیسے کم عقل لوگ منہ کھولے حیرت سے دیکھا کرتے،یہ ہمارے لیے سیکھنے کا نادر موقع ہوتا تھا

زیادہ سے زیادہ کامیابی حاصل کیجئے اور پھر دوسروں کو بھی فیض پہنچائیے، دنیا میں ہر شخص اپنی زندگی میں دولت، خوشی اور مسرت حاصل کرنا چاہتا ہے

مکہ پروجیکٹ تیز رفتاری سے آگے بڑھ رہا تھا،میں نتائج سے پوری طرح مطمئن تھا، ایک دن انہوں نے باتوں باتوں میں  بم پھوڑ دیا 

جب بھی اندرونِ لاہور جاتے کوئی نہ کوئی سوغات ضرور لاتے، ہمارا دوست حادثے میں دانت گنوا بیٹھا،منہ کی بناوٹ دیکھ کر گمان ہوتا ابھی املی چوس کر آیا ہے

آج بھی بنگلادیش کے دل میں پاکستان دھڑکتا ہے، ڈھاکہ میں علامہ اقبال پر سیمینار

 کسی بھی نئے کام کو مہم تصور کیجئے، خطرہ مول لیجئے،محض کنارے کے نزدیک کھڑا ہونے سے کچھ حاصل نہیں ہوتا،اپنی صلاحیتوں کو امتحان کی بھٹی میں ڈالیے 

مکہ پروجیکٹ نے اب میری منشا ء کے مطابق آگے بڑھنا شروع کر دیا تھا، منصوبے کے آغاز میں ہی میری مکہ کے میئر سے تکرار ہوگئی، وہ بااثر بندہ تھا 

مزیدخبریں

نیوزلیٹر





اہم خبریں