فوڈ اتھارٹی ٹیمیں مختلف شہروں میں سرگرم‘ 243 یونٹس کی چیکنگ‘ جرمانے 

  فوڈ اتھارٹی ٹیمیں مختلف شہروں میں سرگرم‘ 243 یونٹس کی چیکنگ‘ جرمانے 

  

ڈیرہ‘ بہاولپور‘ مظفر گڑھ (بیورو رپورٹ‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر‘ نامہ نگار‘ سٹی رپورٹر) فوڈ سیفٹی ٹیموں کی جنوبی پنجاب میں ممنوعہ اور ملاوٹی خوراک کی فروخت کرنے والوں کیخلاف مسلسل آپریشنز جاری ہیں۔ فوڈ سیفٹی ٹیموں نے 243 فوڈ یونٹس کی چیکنگ کے دوران حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی پر کھویا یونٹ سیل جبکہ 207 فوڈ بزنس مالکان کو بہتری نوٹسز جاری کیے ہیں (بقیہ نمبر17صفحہ 6پر)

۔ تفصیلات کے مطابق بہاولنگر میں ویجیٹیبل گھی اور سکمڈ ملک پاؤڈر سے کھویا تیار کرنے پر چشتیاں میں ریاض کھویا یونٹ سیل کردیا۔ دودھ کی سٹوریج کیلئے ممنوعہ کیمیکل ڈرمز کا استعمال کیا جارہا تھا۔ فریزر میں موجود کھوئے میں مردہ مکھیاں بھی پائی گئیں۔ 30 کلو کھویا برآمد جبکہ 55 لٹر ملاوٹی دودھ تلف کردیا گیا۔ مزید برآں بہاولنگر میں ڈینزائر فاسٹ فوڈز کو ورکرز کی ذاتی صفائی نہ ہونے پر 20 ہزار، بہاولپور میں شکیل پان شاپ کو گٹکا فروخت کرنے پر 15 ہزار اور حافظ کریانہ سٹور کو گٹکا فروخت کرنے پر 10 ہزار روپے جرمانہ عائد کیا گیا۔ مجموعی طور پر کی گئی کارروائیوں کے دوران 375 ساشے گٹکا برآمد جبکہ 60 لٹر ایکسپائرڈ ڈرنکس تلف کردی گئیں۔ اڈہ خان چوک پر پنجاب فورڈ اتھارٹی نے مضر صحت مشروبات تلف کردیں، زرائع کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی نے مظفرگڑھ کی تحصیل کوٹ ادو کے علاقے اڈہ خان چوک پر مختلف دوکانوں پر چھاپے مار کر  پیپسی اور دیگر مشروبات کی زائد المعیاد سینکڑوں بوتلیں برآمد کر کے تلف کر دیں اور 2 دوکانوں الشیخو سپر سٹور اور صادق جنرل سٹور پر 10،10 ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کیا ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ موسم گرما میں مشروبات کا استعمال بڑھ جاتا ہے اس لئے اس کو چیک کرنا انتہائی ضروری ہے انہوں نے کہا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی کا مشن خالص اور ملاوٹ سے پاک اشیائے خوردونوش کی فروخت کو یقینی بنانا ہے انہوں نے کہا کہ ملاوٹ زدہ اور ناخالص اشیائے خوردونوش فروخت کرنے والے معاشرے کے مجرم ہیں ان کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا۔

جرمانے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -