قاتلانہ حملےمیں محفوظ رہنے والے آزاد کشمیر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر چوہدری محمدیٰسین نے تحریک انصاف پر سنگین الزام عائد کردیا 

قاتلانہ حملےمیں محفوظ رہنے والے آزاد کشمیر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر چوہدری ...
قاتلانہ حملےمیں محفوظ رہنے والے آزاد کشمیر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر چوہدری محمدیٰسین نے تحریک انصاف پر سنگین الزام عائد کردیا 

  

کوٹلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) آزاد جموں وکشمیر قانون ساز اسمبلی میں لیڈر آف دی اپوزیشن چوہدری محمدیٰسین نے الزام عائد کیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) آزادکشمیر میں گالم گلوچ کے ساتھ تشدد کاعنصر لے کر داخل ہوئی ہے، ایسے حالات آزادکشمیر کے کسی انتخابات میں نہیں دیکھے جس طرح وفاقی حکومت کی پرتشدد مداخلت ہے، ایک سازش کے تحت جانتے بوجھتے حالات کو خراب کیاگیا ہے، شکست کو دیکھتے ہوئے پی ٹی آئی کے غنڈوں نے ہماری گاڑیوں پر بھی فائرنگ کی، مجھ پر قاتلانہ حملہ میں پی ٹی آئی کے امیدوار شوکت فرید ، کرنل(ر) محمد قیوم اور انگلیڈ سے آئے ھوئے بیرسٹر افضل ملوث ہیں اور جو ناخوشگوار واقعہ پیش آیا اس میں بھی ان کے لوگ ملوث ہیں۔

 میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے چوہدری محمدیٰسین نے کہاکہ وفاق کی آشیر باد سے پی ٹی آئی کے غنڈوں نے پورے آزادکشمیر میں امن وامان کا مسئلہ پیدا کردیا ہے ،جو آنے والے وقت میں بھی خطرناک ہوگا، پی ٹی آئی الیکشن کے نام پر آگ اور خون کی ہولی کھیل رہی ہے،ہماری تاریخ شہداءکے ورثاءکی ہے، قاتلوں کی نہیں یہ پی ٹی آئی کا کلچر ہے، ایک سازش کے تحت ہمیں ملوث کرنے کی کوششیں کی جارہی ہے اور کچھ لوگ اپنے ناپاک عزائم کی تکمیل چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انتظامیہ کے کچھ لوگ فریق بنے ہوئے ہیں اور پولنگ سٹیشن یرغمال بنائے گئے ہیں، قانون نافذ کرنے والے ادارے خاموش تماشائی ہیں، یہ صورتحال انتخابات سے قبل وزیراعظم آزادکشمیر کے علم میں لائی گئی تھی،جانتے بوجھتے خطے میں حالات خراب کیے جارہے ہیں اور اس سارے عمل کو وفاق کی پشت پناہی حاصل ہے،آزادکشمیر میں پی ٹی آئی کا کلچر ایک لعنت کی صورت میں سامنے آیا ہے،زبردستی آزاد کشمیر پر مسلط ہونے کی کوششیں کی جارہی ہیں اور اس کے لیے ہر اوچھا ہتھکنڈا استعمال کیاگیا ہے۔

مزید :

علاقائی -آزاد کشمیر -کوٹلی -