قومی اسمبلی کے دو حلقوں میں خواتین کے ووٹ 10 فیصد سے کم ہونے کے باعث نتائج معطل ہونے کے امکانات

قومی اسمبلی کے دو حلقوں میں خواتین کے ووٹ 10 فیصد سے کم ہونے کے باعث نتائج معطل ...

اسلام آباد( این این آئی)قومی اسمبلی کے دو حلقوں میں خواتین کے ووٹ 10فیصد سے کم ہونے کے باعث مذکورہ حلقوں کے نتائج معطل ہونے کے امکانات ہیں۔ 2018ء کے عام انتخابات میں قومی اسمبلی کے 2حلقوں این اے 10شانگلہ اور این اے 48 شمالی وزیرستان میں خواتین کے ووٹ کم ہونے کے باعث الیکشن کمیشن آف پاکستان نے نتیجہ معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ حتمی نتائج آنے پر نتائج معطلی والے ایسے مزید حلقوں کی نشاندہی بھی متوقع ہے۔الیکشن کمیشن کے حکام کا کہنا ہے کہ این اے 10اور این اے 48میں خواتین کے درکار 10فیصد ووٹ پول نہیں ہوئے، خواتین کے 10فیصد سے کم ووٹ والے حلقے کا نتیجہ معطل ہوگا، انتخابی حلقے کے متعلقہ پولنگ سٹیشنز پر دوبارہ پولنگ ہوگی جب کہ ایسے حلقوں کی مکمل رپورٹ آنے پر نتیجہ معطلی کا اعلان ہوگا۔واضح رہے قومی اسمبلی کے جن حلقوں میں الیکشن معطل ہونے کا امکان ہے ان سے (ن) لیگ کے امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے ۔

مزید : صفحہ آخر