سرکاری محکموں کوبھی ای چالان کے حوالے سے مراسلہ جاری کر دیا گیا

سرکاری محکموں کوبھی ای چالان کے حوالے سے مراسلہ جاری کر دیا گیا
سرکاری محکموں کوبھی ای چالان کے حوالے سے مراسلہ جاری کر دیا گیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور ہائیکورٹ کی ہدایت کے بعد شہر میں ا ی چالان کا آغاز ہو چکاہے اور اسی سلسلہ میں سرکاری محکموں کوبھی ای چالان کے حوالے سے مراسلہ جاری کر دیا گیا۔

سرکاری محکموں کو ای چالان کے حوالے سے جاری کردہ مراسلہ کے مطابق سرکاری گاڑیاں بھی ای چالان سے مستثنیٰ نہیں ہیں اور سرکاری گاڑی کے ای چالان پررقم ڈرائیوراداکرے گا۔

واضح رہے کہ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی نے لاہور ہائیکورٹ کی ہدایات کے مطابق24ستمبر سے ای چالان کا آغازکر دیا ہے ۔ ترجمان کے مطابق ابتدائی طور پر جرمانہ بینک آف پنجاب میں جمع ہو گا جبکہ جرمانے کی رقم جمع کر انے کے لیے نیشنل بینک آف پاکستان کو بھی سسٹم میں شامل کیا جا رہا ہے۔ جرمانہ دس دن کی مقررہ مدت میں ادا کرنا لازمی ہوگا۔ مسلسل خلاف ورزی اور جرمانہ ادا نہ کرنے کی صورت میں گاڑی کو قبضے میں لیا جاسکتا ہے۔ گاڑی کے مالک کے علاوہ اگر کوئی اور گاڑی چلا رہا ہو گا تو چالان گاڑی کے مالک کے پتہ پر ہی ارسال کیا جائے گا۔ گاڑی کو فروخت کرنے کی صورت میں دستاویزات کی تبدیلی کے وقت جرمانوں کی ادائیگی لازم ہوگی۔ اسی طرح دوسرے شہروں سے آنے والی گاڑیوں کیلئے بھی نظام لایا گیا ہے۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور