حکومت کا کمسن ابوبکر کے لواحقین کیلئے10لاکھ روپے امداد کا اعلان

حکومت کا کمسن ابوبکر کے لواحقین کیلئے10لاکھ روپے امداد کا اعلان

اسلام آباد(آئی این پی ) وزیر اعظم کی ہدایت پر وزیر مملکت برائے کیڈ ڈاکٹر طارق فضل چوہدری اپوزیشن کی ہڑتال کے دوران وفات پا جانے والے بچے محمد ابو بکر کے گھر گئے اور بچے کی ناگہانی وفات پر انتہائی دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ انھوں نے وزیر اعظم کی طرف سے بچے کے لواحقین کیلئے دس لاکھ روپے کا اعلان کیا۔ وزیر مملکت نے واقعے کو انتہائی افسوس ناک قرار دیا اور کہا کہ شہر میں بد امنی پھیلانے والے احتجاج کے نام پر شہر کو بند نہ کریں ، شہریوں اور ان کے بچوں پر رحم کریں ، انھیں پرامن زندگی گزارنے کی اجازت دیں ، شہری ان شر پسندوں کے ایجنڈے میں شامل نہیں، انھیں نارمل زندگی گزارنے کا حق دیا جائے۔اسلام آباد اور پنڈی کو بند کر کے مزید لوگوں اور ان کے بچوں کی زندگی کو خطرے میں نہ ڈالیں۔اس موقع پر وزیر مملکت نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت طاقت کا استعمال نہیں کرنا چاہتی ، لیکن اسے حکومت کی مجبوری نہ سمجھا جائے ، کسی کو شہر بند کرنے کی اجازت نہیں دیں گے، حکومت شہریوں کے جان ومال کی حفاظت کی ذمہ داری احسن طریقے سے انجام دے گی۔اس موقع پر بچے کے والد طاہر خان نے کہا کہ عمران خان اور شیخ رشید کا کوئی نقصان نہیں ہوا ، بیٹا تو میرا گیا ، میں ان سے کہوں گا کہ آخر اسمبلی کس لئے ہے ؟آپ کیوں سڑکوں پر فیصلے کر رہے ہیں؟ فیصلے سڑکوں پر ہی کرنے ہیں تو اسمبلی کو گرا کر کرکٹ گراؤنڈ بنا دیں۔

مزید : صفحہ آخر