حکومت پاکستان تعاون کرتی تو جونا گڑھ آزاد کرالیتے : نواب جہانگیر خان جی

حکومت پاکستان تعاون کرتی تو جونا گڑھ آزاد کرالیتے : نواب جہانگیر خان جی
حکومت پاکستان تعاون کرتی تو جونا گڑھ آزاد کرالیتے : نواب جہانگیر خان جی

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) نواب آف جونا گڑھ نواب جہانگیر خان جی نے کہا ہے کہ اگر حکومت پاکستان تعاون کرتی تو جونا گڑھ کا معاملہ سامنے آتا اور ہم اسے آزاد کرالیتے لیکن حکومت کی جانب سے اس اہم مسئلے پر کبھی توجہ نہیں دی گئی ۔

نجی ٹی وی نیو نیوز کے پروگرام ایٹ کیو میں گفتگو کرتے ہوئے نواب آف جونا گڑھ نواب جہانگیر خان جی نے قانون دانوں کے مطابق کشمیر اور جونا گڑھ میں فرق ہے میں جونا گڑھ کے معاملے پر کافی کام کرچکا ہوں لیکن حکومت نے ہمارے ساتھ تعاون نہیں کیا اگر حکومت تعاون کرتی تو جونا گڑھ کا معاملہ بھی سامنے آتا۔

انہوں نے ریاست جوناگڑھ کے عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہا جونا گڑھ کے عوام کو بھی کشمیریوں کی طرح بھارتی تسلط کے خلاف   کھڑے ہوجانا چاہیے۔

شیطان کو ہیڈ کوارٹر مل گیا، یہ کیسا ہے اور کس طرح کا دکھتا ہے؟جان کر آپ کے ہوش اڑ جائیں گے

واضح رہے کہ تقسیم ہند کے موقع پر نواب محمد محبت خان جی نے جونا گڑھ کی ریاست کا پاکستان کے ساتھ الحاق کیا تھا تاہم انڈیا نے اس پر قبضہ کرلیا۔ موجودہ نواب جہانگیر خان جی ، نواب محبت خان جی کے پوتے اور کراچی میں جونا گڑھ ہاو¿س میں رہائش پذیر ہیں جبکہ ریاست جونا گڑھ کو بھارتی ریاست گجرات کا حصہ بنادیا گیا ہے۔

برطانوی راج میں ریاست جوناگڑھ کا نقشہ ، 1879

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...