رہزنوں کی فائرنگ سے شہید نوجوان عاطف کی نماز جنازہ ادا

رہزنوں کی فائرنگ سے شہید نوجوان عاطف کی نماز جنازہ ادا

  

ہنگو(بیورو رپورٹ) رہزنوں کی فائرنگ سے شہید نوجوان عاطف کی نماز جنازہ ادا، کثیر تعداد میں علاقہ مکینوں کی شرکت، عوام میں شدید غم و غصے کا اظہار،مشران نے کوہاٹ ہنگو مین جی ٹی روڈ کو مسافروں کے لئے غیر محفوظ قرار دیا،تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتہ کے روز کوہاٹ استرزئی کے مقام پر نا معلوم مسلح افراد کی فائرنگ سے زخمی ہنگو کے رہائشی نوجوان محمد عاطف گزشتہ رات دم توڑ گیا جس کی نماز جنازہ اتوار کے روز ہنگو کے علاقہ سرکی اماں میں ادا کر دی گئی جس میں کثیر تعداد میں شرکت کی جس کے بعد شہید کو اشکبار آنکھوں کے سامنے سپردخاک کر دیاگیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اہل سنت کے مشران مولانا میاں حسین جلالی و دیگر نے کہا کہ کوہاٹ استرزئی کے مقام پر آئے روز اس طرح کے واقعات رونما ہوتے ہیں لیکن آفسوس کہ کوئی پوچھنے والا نہیں ہے اور نہ ہی ہنگو کوہاٹ مین جرنیلی روڈ پر واردات کرنے والا کوئی قاتل یا ملزم گرفتار ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نامعلوم افراد انتہائی آسانی کے ساتھ گاڑیاں چھیننے اور قتل کی وارداتیں کرکے فرار ہوجاتے ہیں اور اگلے روز پھر اس طرح کا واقعہ رونما ہو جاتا ہے لیکن پولیس اس نے اسلسلے میں مکمل خاموشی اختیار رکھی ہے جو کہ سوالیہ نشان ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر پولیس نے اس معاملے میں دلچپسی کا مظاہرہ نہ کیا توہنگو میں قومی سطح پراہل سنت کا گرینڈ جرگہ بلایا جائے گا جس میں کوہاٹ ہنگو مین جرنیلی روڈ کی بندش اور دیگر سخت فیصلوں پر غور کیا جائے گا۔ اس موقع پر مشران نے جلد از جلد قاتلوں کی گرفتار کا مطالبہ کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -