نوٹس: لیڈی ہیلتھ ورکر کی طبیعت خراب‘ نشتر ایمرجنسی میں داخل

  نوٹس: لیڈی ہیلتھ ورکر کی طبیعت خراب‘ نشتر ایمرجنسی میں داخل

  



ملتان (وقائع نگار)لیڈی ہیلتھ ورکر کو احتجاج کرنا مہنگا پڑ گیا۔حکومت سے مذاکرات کی کامیابی کے باوجود شوکاز نوٹسز جاری ہونے کا سلسلہ جاری ہے۔ رابعہ نامی لیڈی ہیلتھ ورکر کی شورکاز نوٹس ملنے پر طبعیت خراب ہوگئی۔دل کی تکلیف میں مبتلا ہو کر نشتر ایمرجنسی داخل کر دیا گیا،لیڈی ہیلتھ ورکر نے احتجاج کا اعلان کر دیا۔ ملتان میں لیڈی ہیلتھ ورکرز کو مطالبات کی منظوری کیلئے احتجاج کرنا مہنگا پڑ(بقیہ نمبر50صفحہ12پر)

گیا لیڈی ہیلتھ ایسوسی ایشن کی جانب سے اپنے مطالبات کی منظوری کے لیے پولیو مہم کے بائیکاٹ کا اعلان کیا گیا تھا لیکن حکومتی ایم این اے احمد حسین ڈیہڑ کی جانب سے مذاکرات کے بعد لیڈی ہیلتھ ورکرز نے احتجاج کی کال واپس لے لی لیکن لیڈی ہیلتھ ورکرز کو شوکاز نوٹس جاری ہونے کا سلسلہ نہ رک لیڈی ہیلتھ ورکر کو نوٹس ملا جس کے بعد اس کی طبیعت ناساز ہوگئی۔ اس حوالے سے۔نیشنل پروگرام لیڈی ہیلتھ ورکر ایسوی ایشن کی صدر رخسانہ انور کی جانب سے احتجاج کا اعلان کر دیا گیا۔رخسانہ انور کا کہنا تھا کے رابعہ کو کچھ ہوا تو اسکے ذمہ دار پروگرام ڈائریکٹر ہوں گے ایم این اے احمد حسین ڈیہڑ کے کہنے پر احتجاج ختم کیا تھا۔مگر اسکے باوجود شوکاز نوٹسز مل رہے ہیں۔دوسری جانب نشتر پیرامیڈیکس نے بھی لیڈی ہیلتھ ورکر کے احتجاج کی حمایت کا اعلان کر دیا۔لیڈی ہیلتھ ورکر کا کہنا ہے کہ مذاکرات کی کامیابی کے باوجودانتقامی کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے۔

داخل

مزید : ملتان صفحہ آخر