”علیم ڈار کو اس بات کا نوٹس لینا چاہئے تھا کہ پشاور زلمی کے چار فیلڈرز۔۔۔“ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست کے بعد کوچ معین خان میدان میں آ گئے، امپائرز سے متعلق ایسا انکشاف کر دیا کہ جان کر ہر پاکستانی حیران رہ جائے گا

”علیم ڈار کو اس بات کا نوٹس لینا چاہئے تھا کہ پشاور زلمی کے چار فیلڈرز۔۔۔“ ...
”علیم ڈار کو اس بات کا نوٹس لینا چاہئے تھا کہ پشاور زلمی کے چار فیلڈرز۔۔۔“ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست کے بعد کوچ معین خان میدان میں آ گئے، امپائرز سے متعلق ایسا انکشاف کر دیا کہ جان کر ہر پاکستانی حیران رہ جائے گا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) فرنچائز کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کوچ معین خان نے پشاور زلمی کے ہاتھوں شکست کی وجہ ناقص امپائرنگ اور کھلاڑیوں کی غلط شاٹ سلیکشن کو قرار دیدیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی شکست پر سٹیڈیم میں رونے والی یہ لڑکی کون ہے؟ بالآخر اس سوال کا جواب مل گیا جو سب پاکستانی جاننا چاہتے ہیں 

پشاور زلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے درمیان یہ میچ انتہائی سنسنی خیز رہا جس میں کوئٹہ کو آخری اوور میں جیت کیلئے 25 رنز درکار تھے۔ انور علی نے تین چھکے اور ایک چوکا مار کر آخری گیند پر شاٹ ماری تو پشاور زلمی کے کھلاڑی نے باﺅنڈری کے قریب کیچ ڈراپ کر دیا لیکن فوراً تھرو پھینک کر کوئٹہ کے میر حمزہ کو رن آﺅٹ کر دیا اور یوں پشاور زلمی یہ میچ 1 سکور سے جیت کر اگلے پلے آف میچ کیلئے کوالیفائی کر گئی۔

میچ کے بعد معین خان نے کہا کہ ”میرے نزدیک سرفراز احمد اور محمد نواز کی ایک ہی اوور میں گرنے والی وکٹیں میچ کا ٹرننگ پوائنٹ تھا۔ پھر میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ میدان میں چار متبادل کھلاڑیوں کی موجودگی کیساتھ اوسط درجے کی امپائرنگ نے بھی کردار ادا کیا کیونکہ علیم ڈار جیسے امپائر کو چار متبادل فیلڈرز کا نوٹس لینا چاہئے تھا۔“

معین خان کا کہنا تھا کہ ” فیلڈنگ کیلئے آنے والے متبادل کھلاڑی کرس جورڈن نے انتہائی اہم کیچ پکڑا لیکن اگر ان کی جگہ زخمی کھلاڑی میدان میں ہوتا تو نتائج مختلف ہوتے۔ تو میں یہ کہہ سکتا ہوں کہ امپائرنگ اوسط درجے کی ہوئی۔ ایک ہی وقت میں چار متبادل کھلاڑی کیسے فیلڈنگ کیلئے آ سکتے ہیں۔“

یہ بھی پڑھیں۔۔۔کراچی کنگز کو ایک اور جھٹکا لگ گیا، شاہد آفریدی کے بعد عماد وسیم بھی باہر ہو گئے، ٹیم کا کپتان ایسے کھلاڑی کو بنا دیا گیا کہ کوئی پاکستانی سوچ بھی نہیں سکتا تھا ، جان کر آپ بے اختیار کہہ اٹھیں گے ”فائنل کراچی میں ہو گا مگر کراچی فائنل میں نہیں ہو گا“ 

معین خان نے انور علی کی بیٹنگ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ”انور بہت اچھا کھیلا اور آخری گیند پر دو رنز ہونے چاہئے تھے۔ اگر میر حمزہ دوسرے سکور کیلئے تیار رہتا تو میچ کا نتیجہ سپر اوور میں ہوتا۔“

مزید : کھیل /PSL /PSL News Update