سردار تنویر الیاس اور لارڈ نذیر کا مسئلہ کشمیر جوبائیڈن انتظامیہ کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ

سردار تنویر الیاس اور لارڈ نذیر کا مسئلہ کشمیر جوبائیڈن انتظامیہ کے سامنے ...
سردار تنویر الیاس اور لارڈ نذیر کا مسئلہ کشمیر جوبائیڈن انتظامیہ کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیئرمین پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ سردارتنویر الیاس خان اور لارڈ نذیر احمد نے مل کر کشمیرکی آزادی کیلئے پاکستان کے بیانیے اور کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق دنیا بھرمیں کشمیرکا مقدمہ لڑنے کافیصلہ کرلیا۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کے معاون خصوصی اورتحریک انصاف کے رہنما سردار تنویر الیاس خان اور ہاؤس آف لارڈ کے سابق رکن لارڈ نذیراحمد کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا اور دونوں رہنماؤں نے اس امر پر اتفاق کیا کہ کورونا ختم ہونے کے بعد امریکہ اور یورپ کا مشترکہ دورہ کرکے سیاستدانوں کوکشمیر کی تازہ صورتحال سے آگاہ کرنے سمیت لابنگ کرکے جوبائیڈن حکومت کو مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے کردار ادا کرنے پر راضی کریں گے۔

اس موقع پر سردار تنویر الیاس خان نے کہا کہ لارڈ نذیر احمد دنیا بھر میں مسلمانوں کی توانا آواز ہیں۔ انہوں نے بین الاقوامی فورمز پر نہ صرف کشمیریوں کی بلکہ فلسطین اور دیگر ممالک میں مسلمانوں کے خلاف ہونے والی سازشوں اورظلم وستم پر آواز اٹھائی اور سفیر کا کردار بھی ادا کیا۔

لارڈ نذیر نے کہا کہ سردار تنویر الیاس کامیاب بزنس مین اور پنجاب حکومت میں کلیدی عہدے پر فائز ہیں۔ اب وہ آزادکشمیر کی سیاست میں آئے ہیں تو یہ ایک اچھا اضافہ ہے۔ امید ہے کہ ان کی وجہ سے آزاد کشمیر میں تعمیر و ترقی کے نئے باب کا آغاز ہوگا۔ انہیں پنجاب حکومت اور بزنس کا جو تجربہ ہے اس کی بنیاد پر تعمیر وترقی کی نئی راہیں کھلیں گی۔ وہ اپنے تجربے اور وژن کے مطابق تعمیر و ترقی اور فلاح وبہبود میں کلیدی کردار ادا کریں گے۔ 

دونوں رہنماؤں نے اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ کشمیر پر جو پاکستانی بیانیہ ہے اس کو مغربی دنیا کے سامنے رکھنے کیلئے ملکر کام کریں گے اورکشمیر کی آزادی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔  کشمیریوں کا جو بنیادی حق ہے اسے حاصل کرکے رہیں گے۔ اس معاملے میں اقوام عالم کو جھنجوڑا جائیگا اورہندوستان کو مجبورکیا جائیگا کہ وہ کشمیریوں کو بنیادی حق خودارادیت کے تحت اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا موقع دے۔

انہوں نے کہا کہ  ہندوستان کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بدلنے کی سازش کو وہ ہر فورم پر بے نقاب کرتے ہوئے کشمیریوں کے ساتھ مل کر جدوجہد کریں گے۔انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام کو اقوام عالم نے یہ حق دیا ہے کہ وہ اپنے مستقبل کا فیصلہ رائے شماری کے ذریعے کریں جبکہ 70 سال سے ظلم وستم کے ذریعے جب کشمیریوں کی رائے تبدیل نہیں جاسکی تو اب بھارت رائے شماری سے قبل آبادی کا تناسب بدل کر فیصلہ اپنے حق میں کرانا چاہتا ہے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -