پاکستان نے بھارت کیلئے نیو کلیئر سپلائرز گروپ اور سلامتی کونسل کی رکنیت کی مخالفت کر دی

پاکستان نے بھارت کیلئے نیو کلیئر سپلائرز گروپ اور سلامتی کونسل کی رکنیت کی ...

 اسلام آباد (خصوصی رپورٹ) وزیراعظم کے مشیر برائے امور خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ پاکستان دہشت گردی کیخلاف جنگ میں عالمی برادری کا صف اول کا اتحادی ہے۔ ہم دوسرے ملکوں سے بھی ایسے ہی عزم کی توقع رکھتے ہیں۔ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے تمام ملکوں کے مشترکہ اقدام اور تعاون ضروری ہے۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ امریکی صدر اوباما کے دورہ بھارت میں ہونے والے معاہدوں اور بیانات کا جائزہ لیا ہے جبکہ بھارت، امریکا معاہدوں کے پاکستان کی سلامتی پر دیرپا اثرات کا جائزہ لے رہے ہیں کیونکہ ہم اپنے قومی سلامتی مفادات کے تحفظ کا حق رکھتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان سمیت اکثر رکن ممالک سلامتی کونسل میں جامع اصلاحات کے حامی ہیں تاہم اقوام متحدہ کی قراردادوں کی مخالفت کرنے والا ملک سلامتی کونسل کا رکن نہیں بن سکتا۔ بھارت کیلئے سلامتی کونسل کی مستقل رکنیت کی مخالفت کرتے ہیں۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ پاکستان امتیاز پر مبنی پالیسیوں کی مخالفت کرتا ہے۔ بھارت، امریکا نیوکلیئر معاہدہ جنوبی ایشیاء میں استحکام پر اثرات ڈالے گا۔ بھارت کیلئے نیوکلیئر سپلائرز گروپ کی رکنیت کی مخالفت کرتے ہیں۔ مشیر خارجہ امریکا کے ساتھ اپنے تعلقات کو بھی قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ امریکا جنوبی ایشیاء میں استحکام اور توازن کیلئے مثبت کردار ادا کرے۔ انہوں نے بھارت سے سمجھوتہ ایکسپریس حملے کے ذمہ داروں اور منصوبہ سازوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ بھی کیا۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...