معروف شاعر علی سردار جعفری کا یومِ پیدائش (29نومبر)

معروف شاعر علی سردار جعفری کا یومِ پیدائش (29نومبر)
معروف شاعر علی سردار جعفری کا یومِ پیدائش (29نومبر)

  

علی سردار جعفری:

علی سردار جعفری کی پیدائش 29 نومبر1913ءمیں ہوئی۔ ا نہوں ے اپناادبی سفر افسا نہ نگاری سے شروع کیا۔ ا ن کی شاعری ا نقلابی اور حب الوطنی کے

جذبات سے بھر پور ہے۔ وہ یکم اگست 2000ءمیں ممبئی میں انتقال کر گئے۔

نمونۂ کلام

صبح ہر اُجالے پہ رات کا گماں کیوں ہے 

جل رہی ہے کیا دھرتی عرش پہ دھواں کیوں ہے 

خنجروں کی سازش پر کب تلک یہ خاموشی 

روح کیوں ہے یخ بستہ نغمہ بے زباں کیوں ہے 

راستہ نہیں چلتے صرف خاک اڑاتے ہیں 

کارواں سے بھی آگے گردِ کارواں کیوں ہے 

ہم تو گھر سے نکلے تھے جیتنے کو دل سب کا 

تیغ ہاتھ میں کیوں ہے دوش پر کماں کیوں ہے 

یہ ہے بزمِ مے نوشی اس میں سب برابر ہیں 

پھر حسابِ ساقی میں سود کیوں، زیاں کیوں ہے 

دین کس نگہ کی ہے کن لبوں کی برکت ہے 

تم میں جعفریؔ اتنی شوخیِ بیاں کیوں ہے 

شاعر: علی سردار جعفری

Subh   Har   Ujaalay   Pe   Raat   Ka   Gumaan   Kiun   Hay

Jal   Rahi   Hay   Kaya   Dharti   Arsh   Pe   Dhuwaan   Kiun   Hay

 Khanjaron   Ki   Saazish   Par   Kab   Talak   Yeh   Khaamoshi

Rooh   Kiun   Hay   Yakh   Basta   Naghma   Be   Zubaan   Kiun   Hay

 Raasta   Nahen   Chaltay   Sirf    Khaak   Urraatay   Hen

Kaarwaan   Say   Bhi   Aagay   Gard-e-Kaarwaan   Kiun   Hay

 Ham   To   Ghar   Say   Niklay   Thay   Jeetnay   Ko   Dil   Sab   Ka

Taigh   Haath   Men   Kiun   Hay  ,   Dosh   Par   Kamaan   Kiun   Hay

 Yeh   Hay   Bazm-e-May   Noshi   Iss   Men   Sab   Baraabar   Hen

Phir   Hisaab-e-Saaqi   Men   Sood   Kiun  ,   Ziyaan   Kiun   Hay

 Dain   Kiss   Nigah   Ki   Hay   Kin   Labom   Ki   Barkat   Hay

Tum   Men   JAFRI   Itni   Shokhi-e-Bayaan   Kiun   Hay

 Poet: Ali   Srdar   Jafri

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -سنجیدہ شاعری -غمگین شاعری -