کوئٹہ حملہ منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا،دہشت گردوں کو ’’را‘‘ ہنڈی کے ذریعے فنڈنگ کرتی ہے:نواب ثناء اللہ زہری

کوئٹہ حملہ منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا،دہشت گردوں کو ’’را‘‘ ہنڈی کے ذریعے ...
کوئٹہ حملہ منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا،دہشت گردوں کو ’’را‘‘ ہنڈی کے ذریعے فنڈنگ کرتی ہے:نواب ثناء اللہ زہری

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک )وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری نے کہا ہے کہ کوئٹہ میں وکلاء پر حملہ باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا، حملے میں ملوث افراد کو ضرور سزا ملے گی، ہم نے دہشت گردوں کا نیٹ ورک پکڑا اور ان سے تفتیش کی، دہشت گردوں کو بھارتی بدنام زمانہ خفیہ ایجنسی’’را‘‘ ہنڈی کے ذریعے فنڈنگ کرتی ہے، صوبہ کے حالات کی خرابی کے ذمہ دار ہم خود ہیں، کچھ ایسی باتیں ہیں جو ابھی منظر عام نہیں لاسکتے ،بلوچستان میں وفاق سے کم اور قوم پرست جماعتوں سے زیادہ افراد نے حکومت کی ہے، ناراض بلوچوں کو منانے اور انہیں قومی دھارے میں لانے کی کوشش جاری ہے، ناراض بلوچوں کے مینڈنٹ کا احترام کریں گے۔

نجی ٹی وی’’92نیوز‘‘ کے پروگرام ’’92ایٹ 8‘‘میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سی پیک کے منصوبے کو ہر صورت پایہ تکمیل تک پہنائیں گے ، سی پیک پاکستان کی معیشت کی شہ رگ ہے ، اسے کسی بھی صورت سبوتاژ نہیں ہونے دیں گے، اس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے ہر قربانی دینے کیلئے تیارہیں مگر دہشت گردوں کے عزائم کو کبھی بھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی سرحدی صورتحال انتہائی نازک ہے، ایک بھارتی آفیسر کو گرفتار کیا ہے جس نے نیٹ ورک کا اعتراف بھی کیا ہے، کچھ ایسی باتیں ہیں جو ابھی منظر عام نہیں لاسکتے، سیکورٹی اداروں کے مسائل کو فوری طورپر حل کرتا ہوں کیونکہ یہ ہمارے محافظ اور ہماری سرحدات ان کی بدولت محفوظ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ 6 ماہ کے دوران ہم نے کوئٹہ کے حالات میں بہتری لانے کی کوشش کی لیکن ایک منصوبہ کے تحت بلوچستان بار ایسوسی ایشن کے صدر کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا اور اس کے بعد کوئٹہ میں بم دھماکہ کرکے وکلاء صحافی اور عام شہریوں کو شہید کیا گیا ،کوئٹہ میں وکلاء پر حملہ باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا لیکن ہم واضح پیغام دیں گے کہ سانحہ کوئٹہ میں ملوث دہشت گردوں کو کیفرکردار تک پہنچائیں گے اور حملے میں ملوث افراد کو ضرور سزا ملے گی۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کو ’’را‘‘ سے ہنڈی کے ذریعے فنڈنگ ہوتی ہے اور بلوچستان کے اکثر واقعات میں بھارت ملوث ہے،ہمارے سیکورٹی ادارے ان کے عزائم کو کسی بھی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے عوام کو اچھا بجٹ دیا اور اس بجٹ میں عوام کیلئے بہت سے منصوبے رکھے گئے ، کوئٹہ میں متعدد فلاحی منصوبوں کا آغاز کیا گیا ہے، صوبہ کے حالات کی خرابی کے ذمہ دار ہم خود ہیں، ون یونٹ کے خاتمہ کے بعد بلوچستان میں پنجابی ‘ سندھی اورپشتونوں نے حکومت نہیں کی بلکہ بلوچوں نے یہاں حکومت کی اور ہم نے خود اپنے عوام کیساتھ زیادتی کی ہے، اپنے لوگوں کیلئے خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے ہیں ،بلوچستان میں وفاق سے کم اورقوم پرست جماعتوں سے زیادہ افراد نے حکومت کی مگر عوام کی تقدیر نہیں بدلی۔ انہوں نے کہا کہ نارا ض بلوچوں کو منانے اور انہیں قومی دھارے میں لانے کی کوشش جاری ہے، ناراض بلوچوں کے مینڈنٹ کا احترام کریں گے، 14 اگست کے حوالے سے پروگرام شیڈول کے مطابق ہونگے، بلوچستان میں عسکری اور سول قیادت ایک پیج پر ہے ۔

مزید : کوئٹہ /اہم خبریں