دیربالا،سیکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں اہم طالبان کمانڈر سمیت 3 ہلاک

دیربالا،سیکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں اہم طالبان کمانڈر سمیت 3 ہلاک

  



دیربالا(آن لائن) پاک افغان بارڈر کے سرحدی علاقے سونئی درہ میں گذشتہ روز سیکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں اہم طالبان کمانڈر سمیت تین ہلاک ہونے والے عسکریت پسنداور ا ن سے برآمد ہونے والا اسلحہ میڈیا کے سامنے پیش کردیا گیا۔ اتوار کے روز چکیاتن سکاوٹ چھاونی میں ڈپٹی کمشنر بالا ڈاکٹر عمران شیخ،ڈی پی او جاوید خان اور آئی ایس پی آر اپر دیر کے ترجمان کرنل عقیل ملک نے میڈیا کو پریس بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ کچھ عرصہ قبل افغانستان کے صوبہ کنڑ سے اپر دیر میں دہشتگردوں کے داخل ہونے کی اطلاع ملی تھی جس پر سیکیورٹی کو ہائی الرٹ کردیا گیا تھا۔اسی دوران بدقسمتی سے چار اگست کو سورباٹ کے مقام پر سیکیورٹی فورسز پر ریموٹ کنٹرول دھماکہ ہوا۔ لیکن خوش قسمتی سے اس میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ جس کے بعد آٹھ اور نو اگست کے درمیانی شب کو دہشتگردوں نے سونئی درہ میں ایک گھر پر حملہ کرکے چار سویلین کو قتل کردیا گیا۔جس کے بعد مقامی رضاکاروں نے انکا گھیراﺅ کرکے فورسز کو آگا ہ کیا ۔فورسز اور پولیس نے عوام کے تعاون سے فوری کاروائی کرتے ہوئے دہشتگردوں کے ساتھ مقابلہ کیا اور کراس فائرنگ کے دوران تین دہشتگردوں کو ہلاک کیا گیا جس میں ایک اہم طالبان کمانڈر جو ضلع اپر دیر کیلئے تحریک طالبان سوات کا کمانڈر مقرر تھا جس کی شناخت قاری عثمان عرف ابوبکر کے نام سے ہوئی جبکہ باقی دو کی شناخت تال حال نہیں ہوئی

دیر

مزید : صفحہ آخر