عالم اسلام کے حکمران جہاد کیلئے تیار نہیں تو ہمارا راستہ چھوڑ دیں ،جہاد ہماری زندگی ہے ۔،سراج الحق

عالم اسلام کے حکمران جہاد کیلئے تیار نہیں تو ہمارا راستہ چھوڑ دیں ،جہاد ...

  



                               اسلام آباد ( سٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہاہے کہ اگر عالم اسلام کے حکمران جہاد کے لیے تیار نہیں تو ہمارا راستہ چھوڑ دیں ہمارے لاکھوں نوجوان اپنی جانیں فلسطین اور کشمیر پر نچھاور کرنے کے لیے تیار ہیں ۔ نائن الیون کے بعد امریکہ نے عالم اسلام کی نصابی کتب سے جہاد کی آیات نکلوا کر جہاد کو ختم کرنے کی کوشش کی ، مگر اس کی ساری ناپاک جسارت خاک میں مل گئی ہے ۔ جہاد ہمار ی زندگی ہے جو قیامت تک جاری رہے گا۔ آئمہ کرام مسلمانوں کو فروعی اختلافات سے نکال کر متحد کرنے کا فریضہ انجام دیں تاکہ ہم ایک امت کے طور پر اپنا وقار حاصل کر سکیں ۔ گزشتہ سات سالوں سے اسرائیل نے غزہ کا محاصرہ کر کے تین جنگیں مسلط کیں اور مہلک ہتھیاروں سے پورے غزہ کو کھنڈر میں تبدیل کردیا گیا ۔ ہزاروں فلسطینیوں کو شہید کیا مگر ان کے عزم وحوصلہ کو شکست نہیں دے سکا۔ سعیدہ وارثی نے احتجاجاً استعفیٰ دے کر عالم اسلام کے حکمرانوں کو غیرت دلانے کی کوشش کی ہے ۔لندن اور شگاگو میں لاکھوں لوگوں نے اسرائیلی بربریت کے خلاف مظاہرے کیے مگر عالم اسلام پر قبرستان کی سی خاموشی ہے ۔ عالم اسلام کے حکمرانوں میں کوئی صلاح الدین ایوبی اور محمد بن قاسم نہیں ۔نوازشریف اسلامی ممالک کے حکمرانوں اور او آئی سی کا اسلام آباد میں اجلاس بلا کر مقبوضہ مسلم علاقوں کی آزادی کے لیے مشترکہ لائحہ عمل بنائیں ۔14 اگست کو پاکستان میں خون خرابہ نہیں ہوناچاہیے اور ایسا تماشا نہ لگایا جائے جس سے دشمن کو بغلیں بجانے کا موقع ملے ۔ میرا دونوں طرف کے لوگوں کو محبت کا پیغام ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آبا دمیں ”لبیک قبلہ او ل ریلی“ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ ریلی سے نائب امیر جماعت اسلامی میاں محمد اسلم ، جماعت اسلامی کے پارلیمانی صاحبزادہ طارق اللہ ، وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید ، تحریک انصاف کے رہنما محمد علی ، امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا پروفیسر محمد ابراہیم خان ، امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر ، زبیر فاروق خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ریلی میں لاکھوں لوگوں نے شرکت کی ۔ریلی میں خواتین و بچوں کی بھی بڑی تعداد شریک تھی ۔ شرکاءنے جماعت اسلامی فلسطین کے پرچم اٹھا رکھے تھے اور پیشانیوں پر کلمہ طیبہ کی پٹیاں باندھ رکھی تھیں۔ سراج الحق نے کہاکہ آج ہم ایک مقدس جہاد کے لیے اٹھے ہیں ۔ میری آنکھوں کے سامنے بیت المقدس ہے ۔ میں فلسطینی بچوں کی تڑپتی لاشوں کو اپنی آنکھوں سے دیکھ رہاہوں جو اپنی زندگی کے آخری وقت میں بھی بیت المقدس کی آزادی کے نعرے لگا رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ فلسطینی شہدا اپنی جانوں کا نذرانہ دے کر اللہ سے اپنا وعدہ پوراکر رہے ہیں ۔وفاقی وزیراطلاعات پرویز رشید نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کی اپیل پر 17اگست کو سرکاری سطح پر ملک بھر میں یوم فلسطین منایا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ آج دنیا بھر کی مسلم ریاستیں اس طرح کا اجتماع نہیں کر سکتیں جیسا جماعت اسلامی نے فلسطینی مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے کیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ عالم اسلام کے بیشتر ممالک آپس میں تقسیم ہیں اب صرف پاکستان ہی متحد رہ گیاہے اور اس کو بھی تقسیم کرنے کی سازشیں ہورہی ہیں ۔ فلسطین کا ساتھ دینے کے لیے پاکستان کے عوام کو ان سازشوں کو ناکام بنا کر اتحاد و یکجہتی کا مظاہرہ کرناہوگا ۔ ایک مضبوط و متحد پاکستان ہی فلسطین کی مدد کرسکتاہے ۔

مزید : صفحہ اول