اعتکاف میں بیٹھے شخص کی بچے کے ساتھ مسجدمیں زیادتی کی کوشش،تاریخ کی شرمناک ترین خبرآگئی

اعتکاف میں بیٹھے شخص کی بچے کے ساتھ مسجدمیں زیادتی کی کوشش،تاریخ کی شرمناک ...
 اعتکاف میں بیٹھے شخص کی بچے کے ساتھ مسجدمیں زیادتی کی کوشش،تاریخ کی شرمناک ترین خبرآگئی

  

گجرات(ڈیلی پاکستان آن لائن)مساجد ، مدارس سکولز یا کسی بھی جگہ بچوں سے زیادتی کے واقعات سننے کو ملتے ہیں لیکن شاید تاریخ میں پہلی بار یہ شرمناک خبرسننے کو ملی ہے کہ دوران اعتکاف کسی نے زیادتی کی کوشش کی ہو۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب کے ضلع گجرات میں ناعاقبت اندیش شخص نے اعتکاف کے دوران 15 سالہ بچے کے ساتھ مبینہ طور پر جنسی زیادتی کی کوشش کر ڈالی۔ 

یہ واقعہ ضلع گجرات  کی تحصیل سرائے عالمگیر کے علاقہ ڈاک پوٹھی میں 14 مئی کو  پیش آیا۔ایف آئی آر کے مطابق جس بچے سے زیادتی کی کوشش کی گئی ہے اس کا نام عادل حسین جبکہ اس  کی عمر پندرہ سال ہے، وہ نویں کلاس کاطالبعلم ہے اور وہ بھی مسجد میں اعتکاف کی غرض سے موجود تھا۔

عادل حسین کے والد کے مطابق وہ رات کو ساڑھے گیارہ بجے کھانا دینے مسجد کے اندر داخل ہوئے تو وہاں بچے کے چلانے کی آوازیں آرہی تھیں۔ قریب پہنچنے پر معلوم ہوا کہ ملزم تبریز حسین بچے کو زیادتی کا نشانہ بنانے کیلئے زبردستی برہنہ کررہا تھا۔

ایف آئی آر کے مطابق عادل کے گھر والوں کے پہنچنے پر ملزم موقع سے فرار ہوگیا ۔

اسی حوالے سے  متاثرہ بچے کے والد افضال حسین نے انڈپینڈینٹ اردو سے بھی بات  کی ہے، انہوں نے بتایا کہ تبریز نے ان کے بیٹے کے ساتھ زیادتی کی کوشش کی مگر وہ وقت پر پہنچ گئے جس کی وجہ سے وہ کامیاب نہیں ہوسکا۔’تبریز کے خاندان  نے ہم سے صلح کرنے کی کوشش کی مگر ہم نے انکار کر دیا اور میں نے اس واقعے کی رپورٹ اپنی مدعیت میں درج کروائی۔‘

ان کاکہنا تھا کہ پولیس ان کے ساتھ مکمل تعاون کر رہی ہے اور ملزم پولیس کی گرفت میں ہے۔

دوسری جانب ایس پی عاطف نذیر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بتایا ہے کہ سرائے عالمگیر میں ایک بدقسمت واقعہ پیش آیا ہے جس کے بعد ملزم کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیاہے۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -پنجاب -گجرات -