شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کا یوم وفات آج عقیدت و احترام سے منایا جائے گا

شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کا یوم وفات آج عقیدت و احترام سے منایا جائے گا

لاہور (خصوصی رپورٹ) مفکر پاکستان، شاعر مشرق ڈاکٹر علامہ محمد اقبال کا 77واں یوم وفات آج ملک بھر میں عقیدت و احترام سے منایا جائے گا۔ یوم وفات کے سلسلے میں ملک بھر میں سرکاری اور غیر سرکاری سطح پر تقاریب، تقریری مقابلوں، سیمینارز، مذاکروں اور دیگر پروگراموں کا اہتمام کیا جائے گا جس میں حکیم الامت ڈاکٹر علامہ اقبال کی تحریک پاکستان کیلئے عظیم خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا جائے گا۔ اخبارات خصوصی ایڈیشن شائع کریں گے جبکہ پی ٹی وی اور نجی ٹی وی چینلز بھی خصوسی پروگرام نشر کریں گے۔ شاعر مشرق علامہ اقبال ممتاز قانون دان اور تحریک پاکستان کی اہم شخصیت اور اردو اور فارسی کے ممتاز شاعر تھے۔ ڈاکٹر علامہ اقبال کو دور جدید کا صوفی شاعر سمجھا جاتا ہے۔ ان کا بحیثیت سیاستدان اہم ترین کارنامہ نظریہ پاکستان کی تشکیل ہے جو انہوں نے 1930ء میں الہ آباد میں پیش کیا تھا۔ علامہ اقبال کا پیش کردہ یہی نظریہ پاکستان کے قیام کی بنیاد بنا۔ اسی وجہ سے علامہ اقبال کو پاکستان کا نظریاتی سرپرست مانا جاتا ہے۔ وہ اگرچہ قیام پاکستان سے قبل ہی اس جہان فانی سے کوچ کر گئے تھے لیکن انہیں پاکستان کے قومی شاعر کی حیثیت حاصل ہے۔ بطور شاعر ان کی معروف ترین تصانیف میں بانگ درا، بال جبریل، ضرب کلیم، پیام مشرق اور دیگر قابل ذکر ہیں۔ وہ 21 اپریل 1938ء کو 60 برس کی عمر میں انتقال کر گئے تھے۔

مزید : صفحہ اول