وزیر اعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ، مختلف ممالک کے ساتھ معاہدوں کی منظوری

وزیر اعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ، مختلف ممالک کے ساتھ معاہدوں کی ...
وزیر اعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ، مختلف ممالک کے ساتھ معاہدوں کی منظوری

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا ، اجلاس میں مختلف ملکوں کے ساتھ معاہدوں اور مفاہتی یادداشتوں کی منظوری دی گئی۔

عمران خان دوغلی پالیسی کے ذریعے ملک میں سرخی پاوڈر کا انقلاب اور تبدیلی لانے چاہتے ہیں: امیر مقام

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس جمعرات کو وزیراعظم آفس میں ہوا۔ کابینہ نے مختلف ملکوں کے ساتھ معاہدوں اور مفاہتی یادداشتوں پر دستخط کی منظوری دی۔ اجلاس میں ڈنمارک اور جمہوریہ سلواکیہ کی وزارت خارجہ کے ساتھ باہمی سیاسی مشاورت کیلئے مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کی منظوری دی گئی۔ کابینہ نے مرتضیٰ خان کو پی او ایف بورڈ کا مالی مشیر تعینات کرنے کی منظوری دی جبکہ رحمت اللہ خان کو نیپرا میں ممبر بلوچستان تعینات کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔ وفاقی کابینہ نے نسیم ورک کی بطور جج سپیشل کورٹ سینٹرل فیصل آباد، ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ناصر حسین کی بطور جج بینکنگ کورٹ بہاولپور جبکہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نوید احمد کو بطور جج بینکنگ کورٹ گوجرانولہ تعیناتی کی منظوری دی۔ سابق چیف آف نیول سٹاف ایڈمرل (ر) محمد ذکاءاللہ نشان امتیاز (ملٹری) کے لئے حکومت سعودی عرب کی طرف سے ”کنگ عبدالعزیز میڈل آف ایکسی لینس “اور حکومت ملائیشیا کی طرف سے آنریری ایوارڈ آف ملائیشین آرمڈ فورسز آرڈر آف ویلور گیلینٹ کمانڈر آف ملائیشین آرمڈ فورسز، فرسٹ ڈگری کی منظوری موثر بماضی دی گئی۔حکومت فلسطین کی طرف سے پاکستان کے سابق سفیر ضمیر اکرم کے لئے ”سٹار آف میرٹ“ کی موثر بماضی منظوری دی گئی۔

مزید : قومی /اہم خبریں