نئی حکومت کا آئی ایم ایف سے قرض لینا کٹھن مرحلہ ہوگا، بلوم برگ

نئی حکومت کا آئی ایم ایف سے قرض لینا کٹھن مرحلہ ہوگا، بلوم برگ

اسلام آباد(آ ئی این پی)معروف عالمی جریدے بلوم برگ کا کہنا ہے کہ معاشی مسائل عمران خان کا انتظارکر رہے ہیں، پاکستان کا آئی ایم ایف سے قرض لینا کٹھن مرحلہ ہوگا، جمہ کو عالمی جریدے بلوم برگ کی جا نب سے جا ری کر دہ ر پو رٹ میں نئی حکومت کو درپیش چلنجزکا ذ کر کیا گیا ۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ معاشی مسائل عمران خان کا انتظار کر رہے ہیں، جاری کھاتوں کا بڑھتا ہوا خسارہ حکومت کے لئے پریشانی کا باعث ہوگا، نئی حکومت کو گرتے ہوئے زرمبادلہ کے ذخائر کو سہارا دینا ہوگا۔رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ موجودہ حالات میں پاکستان کو فوری طور پر 10 سے 15 ارب ڈالر کی ضرورت پڑے گی، جس کے لئے آئی ایم ایف کا دروازہ کھٹکھٹانا پڑسکتا ہے، مگر آئی ایم ایف سے قرض لینا کٹھن مرحلہ ہوگا، آئی ایم ایف اصلاحاتی ایجنڈے پر عملدرآمد کرائے گا، جس میں نجکاری اور ٹیکس نیٹ میں اضافہ بھی شامل ہے،عالمی جریدے بلوم برگ کے مطابق آئی ایف پروگرام سے معاشی ترقی کی شرح متاثر ہوسکتی ہے۔

عالمی جریدہ

مزید : کراچی صفحہ اول