’یہ چیز چھوڑنے کی وجہ سے میرا وزن 60 کلو کم ہوگیا‘ نوجوان لڑکی نے پنے جسم میں ناقابل یقین تبدیلی کا راز بتادیا، عمل کرکے آپ بھی فائدہ اُٹھاسکتے ہیں

’یہ چیز چھوڑنے کی وجہ سے میرا وزن 60 کلو کم ہوگیا‘ نوجوان لڑکی نے پنے جسم میں ...
’یہ چیز چھوڑنے کی وجہ سے میرا وزن 60 کلو کم ہوگیا‘ نوجوان لڑکی نے پنے جسم میں ناقابل یقین تبدیلی کا راز بتادیا، عمل کرکے آپ بھی فائدہ اُٹھاسکتے ہیں

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)موٹاپے کے شکار لوگ مہنگے علاج کرواتے ہیں اور کڑی ورزشیں کرتے ہیں لیکن پھر بھی خاطرخواہ نتائج حاصل نہیں کر پاتے۔ لیکن برطانیہ میں ایک لڑکی نے اپنی خوراک میں ایک تبدیلی کرکے اپنے وزن میں قدرتی طریقے سے اس قدر کمی کر ڈالی ہے کہ آپ سن کر دنگ رہ جائیں گے۔ ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق بروک فیرنز نامی اس 21سالہ لڑکی کا وزن بچپن ہی سے بڑھنا شروع ہو گیا تھا جو 17سال کی عمر تک 120کلوگرام تک جاپہنچا اور وہ گوشت کا پہاڑ بن کر رہ گئی۔وہ شرٹس اور ٹراﺅزر کے علاوہ کوئی لباس نہیں پہن سکتی تھی کیونکہ اسے کوئی لباس پورا ہی نہیں آتا تھا۔ اس کی 18ویں سالگرہ قریب آئی تو اس نے ایک لباس دیکھا جو اسے بہت پسند آیا لیکن وہ اسے پہن نہیں سکتی تھی۔ چنانچہ اس نے ٹھان لی کہ وہ اپنا وزن اتنا کم کرے گی کہ یہ لباس پہن سکے۔

’لوگ سمجھتے ہیں میری عمر40 سال ہے لیکن دراصل میں 70 برس کی ہوں اور اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ پچھلے 28 برس کے دوران میں نے یہ چیز ایک دفعہ بھی نہ کھائی‘ 70 سالہ خاتون نے جوانی کا راز بتادیا، پاکستانیوں کی پسندیدہ چیز کھانے سے منع کردیا

فروک فیرنز کا کہنا ہے کہ ”میں نے اس سے قبل بھی کئی بار ڈائٹنگ کرنے کی کوشش کی اور فاسٹ فوڈ چھوڑنا چاہا لیکن کامیاب نہ ہو سکی۔ اس بار میں نے پختہ ارادہ کیا اور فاسٹ و جنک فوڈ چھوڑ کر صحت مند خوراک کھانے لگی۔ میں بچپن ہی سے مک ڈونلڈ کے کھانے، برگر، پیزا، پاستہ، چاکلیٹ، سینڈوچ اور مٹھائیاں بہت زیادہ کھاتی آ رہی تھی۔ اب میں نے یہ سب چیزیں ترک کر دیں اور ان کی جگہ ناشتے میں انڈے، سامن مچھلی اور مگر ناشپاتی لینے لگی۔ لنچ میں چکن سلادوغیرہ اور ڈنر میں براﺅن چاولوں یا آلو کے ساتھ چکن یا مچھلی کھانے لگی۔ اس کے ساتھ میں کچھ ورزش بھی کرنے لگی۔ میں ہفتے میں 6دن جم جاتی۔ بسااوقات میں دن میں دو بار ورزش کرتی تھی۔ اس طریقے سے میں نے انتہائی کم مدت میں اپنے وزن میں ساڑھے 60کلو گرام تک کمی کر لی اور میرا سائز 8-10تک آ گیا۔ اب میں بھی اپنی سہیلیوں کی طرح کوئی بھی لباس پہن سکتی ہوں۔ میں مارکیٹ میں جاتی ہوں اور وہاں جو لباس بھی پسند آئے خرید لاتی ہوں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس