ماں نے دوسری شادی کیلئے بیٹا سوا لاکھ میں فروخت کردیا

جرم و انصاف

کامونکے (ویب ڈیسک) ماں نے دوسری شادی کیلئے دو سالہ لخت جگر کو فروخت کردیا، جعلی تھانیدار نے بیٹا واپس دلوانے کے بہانے باپ سے لاکھو ں روپے ہتھیا لئے۔

محلہ حبیب پورہ کے عبدالستار کی شادی 4 سال قبل رضیہ بی بی سے ہوئی تھی لیکن گھر یلو جھگڑوں کی وجہ سے رضیہ بی بی شادی کے چند ماہ بعد خاوند کا گھر چھوڑ کر میکے چلی گئی جہاں اسکے ہاں بیٹے کی پیدائش ہوئی۔ طلاق کے لیے  دونوں کے درمیان معاہدہ طے پایا کہ بیٹا ماں کے پاس پرورش پائے گا تاہم گذشتہ سال رضیہ بی بی نے علی حسن نامی شخص سے شادی کرلی اور شادی کے اخراجات اور دیگر ضروریات کے لیے ملزمان امانت، وحید، اشرف اور اسلم وغیرہ کی مدد سے اپنے بیٹے 2 سالہ مصطفی کو مبینہ طور پر ایک لاکھ 20 ہزار روپے کے عوض فروخت کردیا جسے خریدار اپنے ساتھ مسقط لے گیا۔

پہلے شوہر عبدالستار نے بیٹے کی واپسی تھانہ صدر میں درخواست دی تاہم عبدالوحید نامی شخص نے خود کو تھانیدار ظاہر کرکے عبدالستار سے بچے کی برآمدگی کیلئے چھاپے مارنے کے اخراجات کی مد میں ایک لاکھ روپے ہتھیالئے۔