عمران خان کی حکومت کو مشروط مذاکرات کی دعوت

 عمران خان کی حکومت کو مشروط مذاکرات کی دعوت
 عمران خان کی حکومت کو مشروط مذاکرات کی دعوت

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئر مین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے  حکومت کو مشروط مذاکرات کی دعوت دی ہے،پارلیمانی پارٹی اجلاس سے خطاب  کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ عام انتخابات کے بغیر معاشی استحکام ممکن نہیں، آئیں بیٹھ کر قبل از وقت انتخابات پر بات کریں۔

سابق وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اسمبلیاں تحلیل کرنے کا فیصلہ ملکی معیشت کی بہتری کیلئے کیا تھا، یہ لوگ ڈرے ہوئے ہیں  الیکشن کا نام نہیں لیتے، ہم ان کو موقع دیتے ہیں آئیں ہمارے ساتھ بیٹھیں اور الیکشن تاریخ کا اعلان کریں، انہوں نے الیکشن کی تاریخ کا اعلان نہ کیا تو  ہم نے اسمبلیاں توڑ دینی ہیں۔ 

 عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ پنجاب او ر خیبر پختونخوا  کی اسمبلیاں تحلیل کیں تو حکومتی امور ٹھپ ہو جائیں گے، 2صوبائی اسمبلیاں تحلیل ہوئیں تو 66فیصد ملک میں انتخابات ہوں گے، اتحادی جماعت پاکستان مسلم لیگ (ق )کے حوالے سے چیئر مین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ (ق)قدم قدم پر پی ٹی آئی کے ساتھ ہے ، پرویز الٰہی نے یقین دلایا ہے کہ جب کہوں گا وہ اسمبلی توڑنے کی سفارش کر دیں گے۔

 سابق وزیر اعظم کا خطاب میں مزید کہنا تھا کہ  ساری دنیا کہہ رہی ہے کہ ہم ڈیفالٹ کی طر ف جا رہے ہیں، سرمایہ داروں کو ان پر اعتماد نہیں ہے، ترسیلات زر کم ہونا شروع ہو گئی ہیں، پی ٹی آئی کے دور میں قرضے واپس نہ کرنے کا خطرہ 5فیصد تھا، اب قرض واپس نہ کرنے کا خطرہ 100فیصد تک پہنچ گیا ہے، ٹیکس کلیکشن کم ہوناشروع ہو گئی ہے ،مہنگائی اور بیروز گاری کی وجہ سے سٹریٹ کرائم بڑھ گیا ہے، اسحاق ڈ اراب چپ ہو کر بیٹھ گئے ہیں ، الیکشن کی طرف نہیں گئے تو سیاسی استحکام نہیں آئے گا، جب تک سیاسی استحکام نہیں آئے گا معاشی استحکام بھی نہیں آ سکتا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -