تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو

تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو
تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو

  

تمہارا ہجر منا لوں اگر اجازت ہو

میں دل کسی سے لگا لوں اگر اجازت ہو

تمہارے بعد بھلا کیا ہیں وعدہ و   پیماں

بس اپنا وقت گنوا لوں اگر اجازت ہو

تمہارے ہجر کی شب ہائے کار میں جاناں

کوئی چراغ جلا لوں اگر اجازت ہو

جنوں وہی ہے، وہی میں، مگر ہے شہرِ  نیا

یہاں بھی شور مچا لوں اگر اجازت ہو

کسے ہے خواہشِ مرہم گری مگر پھر بھی

میں اپنے زخم دکھا لوں اگر اجازت ہو

تمہاری یاد میں جینے کی آرزو ہے ابھی

کچھ اپنا حال سنبھالوں اگر اجازت ہو

شاعر: جون ایلیا

Tumhaara Hijr Manaa Lun Agar Ijazat Ho

Main Dil Kisi Say Lagaa  Lun Agar Ijazat Ho

Tumhaaray Baad Kia hen Wada  o  Paimaan

Bas Apna Waqt Ganwaa  Lun Agar Ijazat Ho

Tumhaaray Hijr Ki Shab Haa  e   KAar Men Jaana

Koi Charaagh Jalaa  Lun Agar Ijazat Ho

Junun Wahi Hay, Wahi Main, MagarHay Shehr  e  Tanha

Yahaan Bhi Shor Machaa  Lun Agar Ijazat Ho

Kisay Hay Khaahish  e  Marham Gari Magar Phir Bhi

Main Apnay Zakhm Dikhaa  Lun Agar Ijazat Ho

Tumhaari Yaad Men Jeenay Ki Aarzu Hay Abhi

Kuch Apna Haal Sanbhaalun Agar Ijaazat Ho

Poet: Jaun Elia

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -