کم عمر لڑکیوں کو اپنے چنگل میں پھنسانے والا گروہ گرفتار لیکن ان کے ساتھ کیا سلوک ہوتا تھا؟متاثرہ لڑکی نے تہلکہ خیز انکشافات کردئیے

کم عمر لڑکیوں کو اپنے چنگل میں پھنسانے والا گروہ گرفتار لیکن ان کے ساتھ کیا ...
کم عمر لڑکیوں کو اپنے چنگل میں پھنسانے والا گروہ گرفتار لیکن ان کے ساتھ کیا سلوک ہوتا تھا؟متاثرہ لڑکی نے تہلکہ خیز انکشافات کردئیے

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں کم عمر لڑکیوں کو اپنے چنگل میں پھنسا کر جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے اور جسم فروشی کے دھندے پر لگانے والا چند سال قبل پکڑا گیا تھا، جس کا شکار بننے والی ایک لڑکی نے اب حیران کن انکشافات کر دیئے ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق اس گینگ میں زیادہ تر مرد ایشیائی ممالک سے تعلق رکھتے تھے۔ سارا نامی لڑکی بھی ان کا شکار ہوئی اور سالہا سال تک ان کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بنتی رہی۔ اس نے بتایا ہے کہ کئی لڑکیوں نے اس گینگ کے متعلق پولیس کو رپورٹ کی مگر پولیس کچھ نہ کر سکی اور رپورٹ کرنے کے بعد بھی سالہا سال تک وہ لڑکیاں اس گروہ کے ہاتھوں جنسی زیادتی کا نشانہ بنتی رہی۔ یہ گروپ برمنگھم میں گزشتہ دو دہائیوں تک سرگرم رہا۔ 

سارا نے بتایا کہ وہ 2010ءمیں اس گروپ کے ہتھے چڑھی تھی اوراس نے 2012ءمیں پولیس کو اس حوالے سے شکایت کی مگر پولیس کچھ نہ کر سکی۔ اس کے بعد بھی پولیس نے سارا کو کئی بار اس گروپ کے لوگوں کے ساتھ دیکھا مگر وہ اسے ان کے چنگل سے نجات نہ دلا سکی۔ رپورٹ کے مطابق اس گروہ کے مجرموں کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا گیا تھا جہاں سے 2018ءمیں انہیں مجموعی طور پر 101سال قید کی سزا سنا کر جیل بھجوا دیا گیا تھا۔ عدالت میں بتایا گیا کہ یہ گروپ 1998ءسے شیفیلڈ، روتھرہیم اور برمنگھم کے علاقوں میں سرگرم تھا اور زیادہ تر ایسی لڑکیوں کو نشانہ بناتا تھا جو بے گھر اور بے آسرا ہوتی تھیں۔

مزید :

برطانیہ -