8 سالہ بچی کو اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کرنے والا ملزم مبینہ پولیس مقابلے میں ہلاک

8 سالہ بچی کو اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کرنے والا ملزم مبینہ ...

شیخوپورہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) 8 سالہ بچی کو اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کرنے والا ملزم مبینہ پولیس مقابلے میں ہلاک ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق8 سالہ بچی کو اغوا کے بعد زیادتی کا نشانہ بنا کر قتل کرنے والا ملزم شیراز عرف راجہ فاروق آباد میں پولیس مقابلے میں ہلاک ہوا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مارا تو ملزمان نے فائرنگ کردی ، فائرنگ کاتبادلہ ایک گھنٹے تک جاری رہا جس کے دوران ملزم اپنے ہی ساتھیوں کی فائرنگ سے ہلاک ہوگیا۔

”زینب کے اغوا کے بعد میں محلے والوں کے ساتھ تھانے گیا تو تھانیدار نے کہا مالٹے لے کر کھلاﺅ، وہ لے کر آیا تو کہنے لگا ۔۔۔۔۔“زینب کے چچا نے ایسا دلخراش انکشاف کردیا کہ جان کر ہر پاکستانی کا خون کھول اٹھے گا

واضح رہے کہ ملزم نے 6 روز پہلے بچی کو اغوا کرکے زیادتی کا نشانہ بنایا اور قتل کردیا تھا، اغواکی گئی بچی کی 4 روزبعدبوری بند لاش ملی تھی۔فاروق آباد کے علاقے محلہ گرونانک پورہ سے تیسری کلاس کی 8 سالہ طالبہ (م ش) کی لاش گھر کے قریبی گندگی کے ڈھیر سے ملی تھی ، معصوم بچی کے ہاتھ پاﺅں توڑ کر اسے بوری میں بند کرکے پھینکا گیا تھا۔ خیال رہے کہ قصور کی زینب کی لاش بھی گندگی کے ڈھیر سے ہی ملی تھی۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی /انسانی حقوق /جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /شیخوپورہ

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...