باغبانپورہ،دکاندارکی12سالہ طالب علم کو بداخلاقی کا نشانہ بنا نے کی کوشش

باغبانپورہ،دکاندارکی12سالہ طالب علم کو بداخلاقی کا نشانہ بنا نے کی کوشش

لاہور(خبرنگار) باغبانپورہ کے علاقہ میں ایک پرچون فروش نے مبینہ طور پر چھٹی جماعت کے12 سالہ طالب علم کو بداخلاقی کا نشانہ بنا نے کی کوشش کی ۔ پولیس نے ملزم کو حراست میں لینے کے بعد چار گھنٹے بعد ہی’’ آزاد‘‘ کردیا۔ بتایا گیا ہے کہ شادی پورہ کے رہائشی محنت کش محمد اکبر کا 12سالہ بیٹا امیر حمزہ چھٹی جماعت کا طالب علم ہے۔ گذشتہ روز گھر کے قریب واقع دکان سے سودا سلف لینے گیا تودکاندار جاوید نے بہانے سے اُسے دکان کے اندر بلالیا اور مبینہ طور پر بداخلاقی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی مگر امیر حمزہ نے شور مچاناشروع کردیا۔اس دوران محلے داروں نے دکاندار جاوید کو پکڑ کر خوب دُرگت بنائی اور پولیس کے حوالے کردیا، پولیس نے ملزم جاوید کو چار گھنٹے تھانہ کی حوالات میں بند رکھنے کے بعد مبینہ طور پر مک مکا کرنے کے بعد آزاد کردیا۔ لڑکے امیر حمزہ کے والد شیخ اکبر کا کہنا ہے کہ پولیس نے ملزم سے مبینہ طور پر سازباز کی ہے اور اُس کی درخواست پر مقدمہ درج نہیں کیا اور کئی گھنٹے تھانے میں بٹھانے کے بعد ٹال دیاہے ، پتہ چلاہے کہ پولیس نے ملزم کو بھی چھوڑ دیا ہے۔ اس حوالے سے ایس ایچ او ملک خالد کا کہنا ہے کہ لڑکے امیر حمزہ کے والد نے صلح کرلی ہے جس پر ملزم کو فارغ کیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی