اعتکاف میں بیٹھے سراج الحق نے سعویہ پولیس کی دوڑیں لگوادیں

اعتکاف میں بیٹھے سراج الحق نے سعویہ پولیس کی دوڑیں لگوادیں
اعتکاف میں بیٹھے سراج الحق نے سعویہ پولیس کی دوڑیں لگوادیں

  

ریاض (صباح نیوز) امیر جماعت اسلامی سربراہ سراج الحق جو کہ آج کل حرم میں اعتکاف بیٹھے ہوئے ہیں ان سے ملنے والوں کا تانتا بندھا رہتا ہے اپنی نرم طبیعت اور عوام سے گھل ملنے کی عادت نے ان کی مقبولیت میں اضافہ کیا ہے۔

اعتکاف بیٹھنے سے پہلے بھی وہ وہاں کام کرنے والے پاکستانیوں سے گلے ملے اور ان کا حال چال معلوم کرتے دکھائی دئیے جوں جوں پاکستانیوں اور دیگر ممالک کیا سلامی تحریکوں کے کارکنان کو پتہ چل رہا ہے کہ یہاں پر عالم اسلام کی واحد ایٹمی قوت پاکستان کی اسلامی تحریک کے قائد اعتکاف بیٹھے ہوئے ہیں تو وہ ان کو ڈھونڈتے ہوئے پہنچ جاتے ہیں اور ان کے ساتھ ملتے ہیں گپ شپ کرتے ہیں اور تصاویر بناتے ہیں ، افطاری کے بعد پولیس کی دوڑیں لگ گئیں جب انہوں نے ایک جگہ بہت زیادہ جمگھٹا دیکھا تو نزدیک جاکر معلوم ہوا ہے کہ وہاں کوئی حادثہ رونما نہیں ہوا بلکہ لوگوں کی بہت بڑی تعداد امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق کے اردگرد کھڑی ہے اور ان کا درس سن رہی تھی۔

ایک پاکستان اور بھارتی مسلمان نے بتایا کہ ایک بڑے عالم کی موجودگی میں ہمیں اعتکاف کی اصل روح پتہ چلی ہے اور ہم ان کے درس سے مستفید ہورہے ہیں۔ خبررساں ایجنسی نے سیکیورٹی پر معمور ایک پولیس انسپکٹر کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ بعض اوقات لوگوں کے ایک دم جمع ہونے کی وجہ سے ہمیں مشکلات کا سامنا رہتا ہے لیکن یہ لوگ جس شخص کو سننے جاتے ہیں وہ ایک پرامن ہیں جس کی وجہ سے امن وامان کا کوئی مسئلہ درپیش نہیں ہے۔

مزید : بین الاقوامی