مختلف ممالک میں سورج گرہن کا نظارہ کیا گیا

مختلف ممالک میں سورج گرہن کا نظارہ کیا گیا

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا، انٹارکٹیکا، کینیڈا، شمال مشرقی ایشیا، شمالی یورپ، گرین لینڈ اور روس کے شمالی علاقوں میں رواں برس کے پہلے سورج گرہن کا نظارہ کیا گیا۔سال کے پہلے سورج گرہن کا نظارہ رات ہونے کے باعث پاکستان اور بھارت میں نہیں دیکھا جاسکا۔سورج گرہن کا آغاز رات 11 بج کر 52 منٹ پر ہوا جو رات 3 بج کر 42 منٹ پر ختم ہوا۔برطانوی ویب سائٹ ایکسپریس کے مطابق رواں برس 2018 میں ایک دفعہ بھی مکمل سورج گرہن نہیں ہوگا جب کہ 2 جولائی 2019 کو مکمل سورج گرہن کا مشاہدہ کیا جا سکے گا۔150 سال بعد سْپر بلیو بلڈ مون کا نظارہ خیال رہے کہ سورج گرہن اس وقت لگتا ہے جب چاند، سورج اور زمین کے درمیان آجاتا ہے، جس کی وجہ سے سورج کا مکمل یا کچھ حصہ دکھائی دینا بند ہو جاتا ہے اور اس صورت میں چاند کا سایہ زمین پر پڑتا ہے۔س سے قبل گذشتہ ماہ کے آخر میں پاکستان سمیت دنیا کے مختلف ممالک میں 150 سال بعد ’سپر بلیو بلڈ مون‘ یعنی سرخی مائل نارنجی چاند کا نظارہ کیا گیا تھا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...