پی سی جی اے‘ کپاس کی فیکٹریوں  میں آمد کے اعداد و شمار جاری

پی سی جی اے‘ کپاس کی فیکٹریوں  میں آمد کے اعداد و شمار جاری

  

 ملتان (نیوز  ر پو رٹر) پاکستان کاٹن جنرز ایسوسی ایشن پی سی جی اے نے کپاس کی فیکٹریوں میں آمد کے اعدادو شمار جاری کر دیئے ہیں جسکے مطابق 15فروری 2021 تک ملک کی جننگ فیکٹریوں میں 56لاکھ 16ہزار623(بقیہ نمبر38صفحہ 6پر)

گانٹھ کپاس آئی۔ 15 فروری2020 تک 85 لاکھ47ہزار977گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی تھی۔گذشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 29لاکھ31ہزار354گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں کم آئی ہے۔ کمی کی شرح 34.29فیصد رہی۔ صوبہ پنجاب کی فیکٹریوں میں 34لاکھ80ہزار454گانٹھ کپاس آئی ہے جو گذشتہ سال کی اسی مدت میں فیکٹریوں میں آنے والی فصل50 لاکھ73ہزار998گانٹھ کپاس سے 15لاکھ93ہزار544گانٹھ کم ہے۔ پنجاب میں کمی کی شرح31.41 فیصد رہی۔صوبہ سندھ کی فیکٹریوں میں 21لاکھ36ہزار169گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے جبکہ گذشتہ سال34لاکھ 73ہزار979گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی تھی۔صوبہ سندھ میں کمی کی شرح 38.51فیصد رہی۔ یکم فروری2021 تک فیکٹریوں میں آنے والی کپاس سے55لاکھ 95ہزار027گانٹھ روئی تیار کی گئی۔ ملک میں 59جننگ فیکٹریاں آپریشنل ہیں۔ ایکسپورٹرز نے رواں سیزن میں 70ہزار200گانٹھ روئی خرید کی ہے جبکہ ٹیکسٹائل سیکٹرنے 52 لاکھ31ہزار167گانٹھ روئی خرید کی ہے۔ ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان(TCP)نے کاٹن سیزن 2020-21میں خریداری نہیں کی ہے۔ صوبہ پنجاب میں 59جننگ فیکٹریاں آپریشنل ہیں او ر34لاکھ 58ہزار858گانٹھ روئی تیار کی گئی ہے۔ ضلع ملتان میں 15 فروری2021 تک82ہزار512گانٹھ کپاس،ضلع لودھراں میں 39ہزار925گانٹھ کپاس، ضلع خانیوال میں        2لاکھ 29ہزار 089گانٹھ کپاس، ضلع مظفر گڑھ میں 92ہزار616گانٹھ کپاس،ضلع ڈیرہ غازی خان میں 3لاکھ24ہزار992گانٹھ کپاس، ضلع راجن پور میں 88ہزار615گانٹھ کپاس، ضلع لیہ میں 1لاکھ069گانٹھ کپاس،ضلع وہاڑی میں 1لاکھ14ہزار746گانٹھ کپاس، ضلع ساہیوال میں 1 لاکھ78ہزار282گانٹھ کپاس، ضلع رحیم یار خان میں 6لاکھ56ہزار102گانٹھ کپاس، ضلع بہاولپور میں 4لاکھ3ہزار045گانٹھ کپاس، ضلع بہاولنگر میں 9لاکھ87ہزار807گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے۔ضلع سانگھڑمیں 7لاکھ91ہزار278گانٹھ کپاس، ضلع میر پور خاص میں 29ہزار695گانٹھ کپاس، ضلع نواب شاہ میں 63ہزار781گانٹھ کپاس، ضلع نو شہرو فیروز میں 1لاکھ93ہزار831گانٹھ کپاس، ضلع خیر پور میں 2لاکھ18ہزار069گانٹھ کپاس، ضلع سکھر میں 3لاکھ63 ہزار945گانٹھ کپاس، ضلع جام شورومیں 40 ہزار800گانٹھ کپاس، ضلع بلوچستان میں 67ہزار 200 گانٹھ کپاس اور ضلع حیدرآباد میں 1لاکھ5ہزار475گانٹھ کپاس فیکٹریوں میں آئی ہے۔ غیر فروخت شدہ سٹاک3لاکھ15 ہزار256گانٹھ کپاس اور روئی موجود ہے۔

اعداد و شمار

مزید :

ملتان صفحہ آخر -