کھلے دودھ کی ناکوں پر چیکنگ ،قوائد و ضوابط پر سختیسے عملدرآمد کیاجائے :ہائیکورٹ

کھلے دودھ کی ناکوں پر چیکنگ ،قوائد و ضوابط پر سختیسے عملدرآمد کیاجائے ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کو ناکے لگا کر کھلے دودھ کی چیکنگ کے لئے قواعد وضوابط پر سختی سے عملدرآمد کا حکم دے دیا ہے۔چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے مِلک سیلرز ایسوسی ایشن کی درخواستوں پر سماعت کی۔ درخواست گزاروں کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی کے افسر ناکے لگا کر کھلے دودھ کی گاڑیاں روکتے ہیں۔ دودھ کی چیکنگ قواعد وضوابط کے مطابق چیک کرنے سے پہلے ہی سارا دودھ ضائع کر دیا جاتا ہے۔ ڈائریکٹر آپریشنز عائشہ ممتاز نے عدالت کو بتایا کہ ناکوں پر کھلا دودھ قانون کے مطابق چیک کیا جاتا ہے۔ پنجاب پیور فوڈ رولز کی دفعہ 46اور 50کے تحت فوڈ سیفٹی آفیسرز ناکوں پر الیکٹرو میٹر کے ذریعے دودھ کا گاڑھا پن، چکنائی اور دیگر معیار چیک کرتے ہیں۔ اگر دودھ غیرمعیاری ہو تو ضائع کیا جاتا ہے۔ عدالت نے تفصیلی دلائل سننے کے بعد تمام درخواستیں نمٹاتے ہوئے پنجاب فوڈ اتھارٹی کو حکم دیا کہ ناکوں پر کھلے دودھ کی چیکنگ کے لئے قواعد وضوابط پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے۔

مزید :

صفحہ آخر -