پیار کی خاطر برطانیہ سے بھارت آنے والی کو ’سسرال‘راس نہ آیا،انتہائی المناک واقعہ ہو گیا

پیار کی خاطر برطانیہ سے بھارت آنے والی کو ’سسرال‘راس نہ آیا،انتہائی ...
پیار کی خاطر برطانیہ سے بھارت آنے والی کو ’سسرال‘راس نہ آیا،انتہائی المناک واقعہ ہو گیا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) فیس بک سے شروع ہونے والے ایک اور معاشقے کا دردناک انجام ہو گیا۔ برطانیہ سے ہزاروں میل کا سفر طے کر کے اپنے محبوب سے ملنے بھارت آنے والی خاتون موسم کی شدت برداشت نہ کر سکی اور چل بسی۔ 45سالہ برطانوی خاتون انجیلا سلین اور 30سالہ بھارتی شہری جسپال سنگھ کی ملاقات فیس بک پر ہوئی جو بہت جلد محبت میں بدل گئی۔ انجیلا 3بچوں کی ماں تھی اور دس سال قبل اپنے شوہر سے طلاق لے چکی تھی۔

مزیدپڑھیں:اگر تم کنواری ہو تو ہسپتال چلو،سعودی دولہے کی اپنی دولہن سے انتہائی شرمناک فرمائش

جسپال سے اس کی ملاقات گزشتہ سال مئی میں ہوئی اور اس نے دسمبر میں بھارت آنے کا ارادہ کیا لیکن جسپال نے اسے منع کردیا اور کہا کہ دسمبر میں یہاں بہت سردی ہوتی ہے تم برداشت نہیں کر پاﺅ گی۔ انجیلا نے ارادہ ترک کیا لیکن پھر جسپال کو بتائے بغیر اس سال مئی میں بھارت آنے کے لیے اپنی ٹکٹ بک کروا لی۔ ٹکٹ بک کروانے کے بعد اس نے جسپال کو بتایا کہ وہ مئی میں بھارت آ رہی ہے، جسپال نے اسے مئی کی گرمی کے متعلق بتایا لیکن اس نے کہا کہ اب میں ٹکٹ بک کروا چکی ہوں۔ لہٰذا وہ 4مئی کو بھارت پہنچ گئی، اس کی فلائٹ رات 2بجے امرتسر ائیرپورٹ پر اتری جہاں جسپال نے اس کا استقبال کیا۔ پریمی جوڑا کچھ دن تک ایک ساتھ گھومتا رہا۔11مئی کوانجیلا کی اچانک طبیعت خراب ہونے پر جسپال اسے دیپ ہسپتال لے گیا جہاں ڈاکٹروں نے بتایا کہ اسے خطرناک قسم کا نمونیا ہو گیا ہے۔ دیپ ہسپتال کے ڈاکٹروں نے انجیلا کی تشویشناک حالت کے پیش نظر16مئی کو اسے ست گرو پرتاب سنگھ اپالو ہسپتال لدھیانہ ریفر کر دیا۔ ست گرو ہسپتال میں داخل ہونے کے اگلے روز17مئی کو صبح 10بجے انجیلا نے دم توڑ دیا۔جسپال کا کہنا ہے کہ اسے انجیلا کی موت سے انتہائی صدمہ پہنچا ہے، وہ 10دنوں میں ہی ہمارے خاندان کی فرد بن گئی تھی، ہم نے ایک ساتھ کئی تاریخی مقامات کی سیر کی، لیکن افسوس کہ آج مجھے انجیلا کے بچوں کو فون کر کے بتانا پڑا کہ ان کی ماں اس دنیا میں نہیں رہی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس