ادارے حدود سے تجاوز کریں تو ملک کمزور پڑ جاتے ہیں: جسٹس قاضی فائز عیسیٰ

ادارے حدود سے تجاوز کریں تو ملک کمزور پڑ جاتے ہیں: جسٹس قاضی فائز عیسیٰ
 ادارے حدود سے تجاوز کریں تو ملک کمزور پڑ جاتے ہیں: جسٹس قاضی فائز عیسیٰ

  


 کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا کہنا ہے کہ ادارے حدود سے تجاوز کریں تو ملک کمزور پڑ جاتے ہیں۔

نجی ٹی وی ایکسپریس نیوز کے مطابق کراچی میں تقریب سے خطاب کے دوران جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کا کہنا تھا کہ قائد اعظم محمد علی جناح نے یہ واضح کیا تھا کہ پاکستان ایک جمہوری ملک ہوگا، ملک کے آئین میں کہا گیا ہے کہ جمہوریت کو قائم رکھنا ایک فریضہ ہے، جمہوری اصولوں پر گامزن رہنے سے ملکی سالمیت برقرار رہے گی۔ جمہوریت کو نظرانداز کرنے کے نتیجے میں ہم آدھے پاکستان سے محروم ہوچکے۔جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کا کہنا تھا کہ مجھ سمیت صدر پاکستان، وزیراعظم، وزرا اور افواج پاکستان کے ہر سپاہی پر آئین اور حلف کی پاسداری لازم ہے۔ تاریخ بتاتی ہے کہ جب ادارے اختیار سے تجاوز کرتے ہیں تو ملک نا صرف کمزور بلکہ ٹوٹ بھی سکتا ہے، عدلیہ کو بھی چاہیے کہ وہ اپنے دائرہ اختیار سے تجاوز نہ کرے۔

مزید : قومی


loading...