مسلم شہریوں کو اسلام کے بنیادی  عقائد کی تعلیم و تربیت دینا ریاست  کی آئینی ذمہ داری‘ محمد عبداللہ گل

         مسلم شہریوں کو اسلام کے بنیادی  عقائد کی تعلیم و تربیت دینا ریاست  کی ...

  

 ہارون آباد(نامہ نگار)محمد عبداللہ گل نے کہا ہے کہ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کی 100کتابوں میں اسلام اور تاریخ پاکستان کے خلاف اقدام کی نشان دہی کرنے پر سابق (بقیہ نمبر45صفحہ6پر)

ایم ڈی رائے منظور کو عہدے سے ہٹا دینا لمحہ فکریہ ہے۔جس بچے کی پیدائش کے وقت کان میں اذان دی جاتی ہو بھلا اُسے دین اسلام سے کیسے دور کیا جا سکتا ہے وہ کون سی نادیدہ قوتیں ہیں جو پاکستان میں اسلام اور پاکستان مخالف نصاب کو شامل کرنا چاہتی ہیں۔ محمد عبداللہ حمید گل نے کہا کہ پاکستان ایک اسلامی نظریاتی مملکت ہے آئین پاکستان کی روسے پاکستان کی مسلم عوام کو اسلام کے بنیادی عقائدکی تعلیم و تربیت ریاست کی آئینی ذمہ داری ہے اور تمام ٹیکسٹ بک بورڈ آئین کے پاسداری کے کاربند ہیں۔ دین اسلام کے مسلمہ عقائد و تعلیمات کو بطورِ نصاب کے دنیا کے کسی بھی مذہب کے فرد کو ادیان  کے تقابل کے لئے اگر تعلیم دی جائے تو اس کے لئے ضروری ہے جس کو جس مذہب کی بھی تعلیم بطورِ نصاب کے حاصل کرنا مقصود ہو اس کو اس مذہب کے بنیادی ماخذ سے ہٹا کر اپنی طرف سے تحریف و تبدیل کر کے تعلیم نہیں دی جا سکتی یہ بین الاقوامی تعلیمی معیار کے منافی ہے پوری دینا کے محققین دوران تحقیق تمام مذہب کو اس کی اصل کے ساتھ سیکھنے کی ترغیب دیتے ہیں  لیکن افسو س  ہی کیا جا سکتا کہ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کو جو کہ ایک سرکاری ادارہ ہے اس کو آئین کی پاسداری کا کوئی خیال نہیں بلکہ اس موجود کالی بھیڑیں طلباء و طالبات کے نصاب میں تمام تاریخی  حقائق کو اس کو اصل ماخذ کو سامنے رکھ کر ترتیب دے اور اسلامی نظریاتی مملکت میں دینی نصاب میں تغیر و تبدل کر کے مذہبی اور تاریخی حقائق کو مسخ کرے یہ عوام کو کسی طور قابلِ قبول نہیں اگر حکومت نے آئین کے تحت اس میں ملوث پائے گئے افراد کے خلاف کاروائی نہ کی تو اس کا سخت ردِ عمل سامنے آئے گا اور ہم عوامی امنگوں کے مطابق عوام کے ساتھ پاکستان کے اسلامی تشخص  کے لئے ہر ممکنہ اقدام کریں گے۔

ذمہ داری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -