راوی اربن پراجیکٹ منصوبے سےشہر لاہور کی ضروریات پوری  اور اقتصادی سرگرمیاں تیز ہوں  گی:سردار تنویر الیاس خان

راوی اربن پراجیکٹ منصوبے سےشہر لاہور کی ضروریات پوری  اور اقتصادی سرگرمیاں ...
راوی اربن پراجیکٹ منصوبے سےشہر لاہور کی ضروریات پوری  اور اقتصادی سرگرمیاں تیز ہوں  گی:سردار تنویر الیاس خان

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعلیٰ پنجاب کےمعاونِ خصوصی اور  سرمایہ کاری بورڈ کے چیئرمین سردار تنویر الیاس خان نےکہاہےکہ وزیراعظم عمران خان  روای اربن پراجیکٹ میں خصوصی طور پر دلچسپی لے رہے ہیں اور وہ اس پراجیکٹ کو ترجیح بنیادوں پر مکمل کرنے کے خواہاں ہیں،حکومت کے اس میگا پراجیکٹ سے روزگار کے وسیع مواقع پیدا ہونے کے ساتھ شہر لاہور کی ضروریات پوری  اور اقتصادی سرگرمیاں بھی تیز ہوں  گی۔

تفصیلات کے مطابق سردار تنویر الیاس خان نے چیئرمین راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی راشد عزیز سے ملاقات کی ،اس موقع پر چئیرمین راوی ریور اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی نے سردار تنویر الیاس خان کو پراجیکٹ کی تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اس میگا  پراجیکٹ پر  50 بلین ڈالرز  کی لاگت آے گی اور پہلے فیز میں 5 ارب ڈالرز سے اس منصوبے پر کام شروع کیا جا چکا ہے،مکمل پراجیکٹ ایک لاکھ دو  ہزار  ایکڑ پر مشتمل ہے اورپہلہ فیز 29ہزار ایکڑ اراضی پر محیط ہوگا۔اُنہوں نے مزید بریف کرتے ہوئے بتایا کہ یہ باقاعدہ ایک منظم پراجیکٹ ہے، اس میں قدرتی ماحول کو اجاگر کیا جائے گا،  اس سلسلے میں پنجاب سرمایہ کاری بورڈ کی مکمل معاونت کی ضرورت ہے جس کے لیے باقاعدہ  ایم او یو پر دستخط کیے جائیں۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب کے معاون خصوصی سردار تنویر الیاس خان نے راشد عزیز کو اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ پنجاب سرمایہ کاری بورڈ  ہر لحاظ سے آپ کے ساتھ ہے اور اس پراجیکٹ کی مارکیٹنگ میں مثبت کردار ادا کرے گا ،اس  منصوبے پر پیشرفت کی اعلیٰ سطح پر نگرانی کی جارہی ہے۔

 سردار تنویر الیاس خان نےکہا کہ  دریائےراوی کی گزر گاہ میں 46کلو میٹر جھیل بنانے کا فیصلہ قابلِ تحسین ہے،یہ ماحول دوست منصوبہ ہے ،یہاں لگائے جانے والے60لاکھ سے زائد پودے ماحولیاتی آلودگی میں واضح کمی لائیںگے،پانی کیلئےبیراج اورویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ بنائے جائیںگے،جھیل میں بارشوں کا وہ پانی ذخیرہ کیا جائے گا جو اس سے قبل ضائع ہو جاتا تھا،جھیل بننے سے نہ صرف دریا کا ایکو سسٹم بہتر ہوگا بلکہ زیر زمین پانی کا لیول بھی بحال ہوگا، اس جھیل سے تقریباً ایک ارب لیٹر پانی زیر زمین جائے گا اور آبی بخارات کی صورت میں موسم کو خوشگوار بنانے کا سبب بنے گا۔ 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -