قتل کئیس ، مدعی حصول انصاف کیلئے 4سال سے دھکے کھانے پر مجبور

قتل کئیس ، مدعی حصول انصاف کیلئے 4سال سے دھکے کھانے پر مجبور

 لاہور(نامہ نگار)سیشن عدالت میں قتل کیس کا مدعی اور اس کا بیٹا 4سال سے انصاف کے حصول کے لئے دھکے کھانے پر مجبور ہوگئے ۔متاثرہ شخص بادل حسین کا کہنا ہے کہ محلے کی لڑائی میں میرا بھائی قتل اور بیٹامحسن علی گولیاں لگنے سے ہمیشہ کیلئے معزور ہو چکا ہے ،پھر بھی معذور بیٹے کے ساتھ انصاف کی آس لئے ہر تاریخ پر پیش ہوتا ہوں۔عدالتی سماعت کے موقع پر محسن علی کا کہنا تھا ملزم احمد نثار، شاہد عرف شادی اور ولید نے معمولی لڑائی پر چچا کو قتل کر دیا اورمجھے بھی گولیاں لگیں جس سے میں ہمیشہ کے لئے معذور ہو گیا ہوں۔ملزمان کے خلاف تھانہ سبزہ زار میں 2014 میں مقدمہ درج ہوا تھا ،اس کیس کی ایڈیشنل سیشن جج ملک تنویر احمد اعوان کیس کی سماعت کر رہے ہیں ،4سال گزر گئے ابھی تک مقدمہ میں گواہان کے بیانات قلمبند نہیں ہوسکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اب میں اور میرے والد تاریخوں پر آکر تھک گئے ہیں،انہوں نے استدعا کی جلد از جلد سماعت مکمل کرکے انہیں انصاف فراہم کیا جائے ۔

مزید : علاقائی