نیب آرڈنیس سمجھنے کیلئے دوبارہ ڈگری لینا پڑے گی، جسٹس (ر)وجہہ الدین

نیب آرڈنیس سمجھنے کیلئے دوبارہ ڈگری لینا پڑے گی، جسٹس (ر)وجہہ الدین

  



اسلام آباد (این این آئی)جسٹس (ر) وجیہ الدین احمد نے نیب ترمیمی آرڈیننس پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیب آرڈنیس کو سمجھنے کے لیے انہیں قانون کی تعلیم دوبارہ حاصل کرنا پڑے گی۔اپنے ایک بیان میں چیئرمین عام لوگ اتحادجسٹس (ر) وجیہہ الدین احمد نے کہا کہ حکمرانی کا عجیب و غریب انداز اپنایا جا رہا ہے، ابتدائی نیب آرڈیننس 1999 عملاً ختم کر دیا گیا ہے اور اب نااہلی سے قومی خزانے کو پہنچنے والا نقصان کرپشن کے ذمرے میں نہیں آئیگا۔وجیہ الدین احمد نے کہا کہ آرڈیننس کے ذریعے بدعنوانوں کو کھلی چھوٹ دیدی گئی،خود حکومت اور حزب اختلاف کے لوگوں کو بھی فائدہ پہنچے گا۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے اپنے موجودہ حالات کو تحفظ دیا ہے، آنے والے وقتوں کے لیے بھی حکمرانوں نے خلاصی حاصل کر لی ہے۔جسٹس (ر) وجیہہ الدین کے مطابق احتساب کے نعرے سے ہوا نکل گئی ہے، یہ ایک بہت وسیع پیمانے پر پھیلا ہوا این آر او ہے۔

وجہیہ الدین

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...