جب ہم کہیں نہ ہوں گے  تب شہر بھر میں ہوں گے

جب ہم کہیں نہ ہوں گے  تب شہر بھر میں ہوں گے
جب ہم کہیں نہ ہوں گے  تب شہر بھر میں ہوں گے

  

جب ہم کہیں نہ ہوں گے  تب شہر بھر میں ہوں گے

پہنچے گی جو نہ اس تک، ہم اُس خبر میں ہوں گے

تھک کر گریں گے جس دَم، بانہوں میں تیری آ کر

اُس دَم بھی کون جانے، ہم کس سفر میں ہوں گے

اے جانِ! عہد و پیماں، ہم گھر بسائیں گے، ہاں

تُو اپنے گھر میں ہو گا، ہم اپنے گھر میں ہوں گے

میں لے کے دل کے رشتے، گھر سے نکل چکا ہوں

دیوار و دَر کے رشتے، دیوار و دَر میں ہوں گے

تجھ عکس کے سوا بھی، اے حُسن  وقتِ رُخصت!

کچھ اور عکس بھی تو  اس چشمِ تر میں ہوں گے

ایسے سراب تھے وہ، ایسے تھے کچھ کہ  اب بھی

میں آنکھ بند کر لوں   تب بھی نظر میں ہوں گے

اس کے نقوشِ پا کو  راہوں میں ڈھونڈنا کیا

جو  اس کے زیر پا تھے وہ میرے سر میں ہوں گے

وہ بیشتر ہیں   جن کو   کل کا خیال کم ہے

تُو رُک سکے تو ہم بھی ان بیشتر میں ہوں گے

آنگن سے وہ جو پچھلے دالان تک بسے تھے

جانے وہ میرے سائے اب کِس کھنڈر میں ہوں گے​

یہ تو کمر عجب ہے اِک سوچ ہے جو  اب ہے

اب جانے ہاتھ میرے کس کی کمر میں ہوں گے

شاعر: جون ایلیا

Jab Ham Kahen Na Hon Gay Tab Shehr Bhar Men Hon Gay

Pahunchay Gi Jo Na USs Tak Ham Uss Khabar Men Hon Gay

Thak Giren Gay Jiss Dam Baanhon Men Teri Aa Kar

Uss Dam Bhi Kon Jaanay Ham Kiss Safar Men Hon Gay

Ay Jaan  e  Ehd  o  Paimaan Ham Ghar Basaaen Gay Haan

Tu Apnay Ghar Men Ho Ga , Ham Apnay Ghar Men Hon Gay

Main Lay K Dil K Rishtay Ghar Say Nikal Chuka Hun

Dewaar  o  Dar K Rishtay Dewaar  o  Dar Men Hon Gay

Tujh Aks K Siwa Bhi Ay Husn  ! Waqt  e   Rukhsat

Kuch Aor Aks Bhi To Iss Chashm  e  Tar Men Hon Gay

Aisay Saraab Thay Wo aisay Thay Kuch Keh Ab Bhi

Main Aankh Band Kar Lun Tab Bhi Nazar Men Hon Gay

Uss K Naqoosh  e  Paa Ko Raahon Men Dhoondna Kia

Jo Uss K Zer  e  Paa Thay Wo Meray Sar  Men Hon Gay

 Wo Beshtar Hen Jin Ko Kall Ka Khayaal Kam Hay

Tu Rukh Sakay To Ham Bhi Un BeshtaarMen Hon Gay

Aangan Say Wo Jo Pichlay Dalaan Tak Basay Hen

Jaanay Wo Meray Saaey Ab Kiss Khandar Men Hon Gay

Yeh To Kamar Ajab Hay Ik Soch Hay Jo Ab Hay

Ab Janay Haath Meray Kiss Ki Kamar Men Hon Gay

Poet:Jaun Elia

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -