کشش ثقل کی لہروں کی دریافت پر طبیعیات کا نوبل انعام

کشش ثقل کی لہروں کی دریافت پر طبیعیات کا نوبل انعام
 کشش ثقل کی لہروں کی دریافت پر طبیعیات کا نوبل انعام

  


سٹاک ہوم(مانیٹرنگ ڈیسک) نوبل پرائز کمیٹی نے 2017 کیلیے نوبل انعام برائے طبیعیات (فزکس) کا اعلان کردیا ہے جس کے مطابق اس سال ایسے تین ماہرین کو نوبل انعام برائے طبیعیات کا مشترکہ حقدار ٹھہرایا گیا ہے جنہوں نے کششِ ثقل کی موجیں دریافت کرنے کے ضمن میں کلیدی کردار ادا کیا تھا۔ نوبل انعام کی نصف رقم رینر وائس کو جبکہ بقیہ نصف رقم بیری سی بیرش اور کپ ایس تھورن میں مساوی تقسیم کی گئی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ سال امریکا میں ایک تحقیقی منصوبے ’’لائیگو‘‘ (LIGO) کے تحت کشش ثقل کی لہریں دریافت کی گئی تھیں جن کی پیش گوئی 100 سال پہلے البرٹ ا?ئن اسٹائن نے اپنے نظریہ اضافیت (عمومی) میں کی تھی۔ لائیگو کی اس تحقیقی ٹیم میں پاکستانی نڑاد خاتون سائنسداں نرگس ماول والا بھی شامل تھیں۔ اگرچہ ماہرین کو امید تھی کہ 2016 ہی میں اکیسویں صدی کی اس سب سے بڑی سائنسی دریافت کو نوبل انعام دیا جائے گا لیکن نوبل کمیٹی نے اس حوالے سے مزید شہادتیں حاصل ہوجانے کے بعد ہی اس دریافت پر نوبل انعام دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

مزید : صفحہ اول