آدم خور خاتون 11 افراد کو قتل کرکے کھا گئی

آدم خور خاتون 11 افراد کو قتل کرکے کھا گئی
آدم خور خاتون 11 افراد کو قتل کرکے کھا گئی

  

ماسکو (ویب ڈیسک) روس میں ایک 68 سالہ خاتون ایسی بھی ہے جو اب تک 11 افراد کو قتل کرکے ان کا گوشت کھاچکی ہے۔ روسی پولیس کے مطابق تماراسامسونووانے گزشتہ 2 دہائیوں کے دوران 11 افراد کو قتل کیا ہے اور اس نے ان تمام وارداتوں کی تفصیلات اپنی ایک خفیہ ڈائری میں لکھ کر اپنی روسی، انگریزی، جرمن اور کالے جادواور فلکیات کی کتابوں کے ساتھ رکھی ہوئی تھی پولیس کے مطابق تمارا اپنے آخری شکار کی باقیات پلاسٹک بیگ میں ڈال کر ٹھکانے لگارہی تھی کہ سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے سینٹ پیٹرزبرگ سے اسے حراست میں لے لیا گیا۔ تفتیشی افسران کو شک ہے کہ سابقہ ہوٹل ملازمہ تمارا پانے شکار کے جسم کے کئی حصوں کو بھی کھا جاتی ہے۔ تمارا کو جب گرفتار کیا گیا تو اس نے کہا کہ مجھے معلوم تھا آپ لوگ آﺅگے سارے شہر کو میرے بارے میں معلوم ہوگیا میں نے سب جان بوجھ کر کیا اب میرے جینے کا کوئی راستہ نہیں میں نے آخری قتل کے ساتھ ہی یہ باب بند کردیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی