فوڈ اتھارٹی کی دودھ اور گوشت کے بعد جعلی مصالحوں کے خلاف کارروائی، مصالحوں کے نام پر کیا بیچا جارہا تھا؟

فوڈ اتھارٹی کی دودھ اور گوشت کے بعد جعلی مصالحوں کے خلاف کارروائی، مصالحوں ...
فوڈ اتھارٹی کی دودھ اور گوشت کے بعد جعلی مصالحوں کے خلاف کارروائی، مصالحوں کے نام پر کیا بیچا جارہا تھا؟

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) ملاوٹ مافیا کے خلاف گرینڈ آپریشن جاری,پنجاب فوڈ اتھارٹی کی فوڈ سیفٹی ٹیموں نے کھلے ملاوٹی مصالحہ جات فروخت کرنے پر 2 مرچ گرائنڈنگ اور نمک یونٹ سیل کردیا،کارروائیوں کے دوران بھاری مقدار میں مصالحہ جات اور خام مال ضبط کر لیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق فوڈ سیفٹی ٹیموں نے اوکاڑہ کے مختلف علاقوں میں چیکنگ کرتے ہوئے مصالحہ جات کی تیاری میں مضر صحت اجزاء کی ملاوٹ پرحاجی منور گرائنڈنگ یونٹ اورحاجی رحمٰن عطامصالحہ چکی کو سیل کر دیا۔اسی طرح سابقہ ہدایات کی خلاف ورزیوں، صفائی اور سٹوریج کے انتہائی ناقص انتظامات پرکرمانوالہ نمک کوبھی سربمہرکیا گیا۔علاوہ ازیں کارروائیوں کے دوران 7 ہزار کلو کھلے مصالحہ جات،5گرائنڈنگ مشینیں اور بھاری مقدار میں خام مال ضبط کر لیاگیا۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ مصالحوں کی تیار ی میں کھلے رنگوں اور کیمیکلز کی ملاوٹ سے سرخ مرچ پاؤڈر تیار کیا جا رہا تھا۔نمک یونٹ کی چیکنگ کے دوران حشرات کی بہتات،ملازمین کے میڈیکلز اور پیکنگ پر لیبلنگ عدم موجود پائی گئی۔کیپٹن (ر) محمد عثمان کا مزید کہنا تھا کہ کھلے مصالحہ جات میں مضرِ صحت اشیاء کی ملاوٹ معدے اورانتڑیوں کے کینسر سمیت متعدد موذی بیماریوں کا سبب بنتی ہے۔انہوں نے واضح کیا کہ پنجاب فوڈ اتھارٹی قوانین کے مطابق صرف معیاری مصالحہ جات مکمل لیبلنگ اورپیکنگ میں فروخت کیے جا سکتے ہیں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور